ہوم / سماجی بہبود / مالیاتی شمولیت / اے ٹی ایم متعلقہ  موضوعات میں بیداری
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

اے ٹی ایم متعلقہ  موضوعات میں بیداری

خود کار ٹیلر مشین ( اے ٹی ایم )


خود کار ٹیلر مشین ( اے ٹی ایم ) کی پَہلی تِجارتی شروعات 1960 کی دہائی میں کی گئی تھی ۔ اے ٹی ایم کی شروعات ایک اہم تکنیکی ترقی ثابت ہوئی جِس نے مالی اداروں کو اپنے گاہکوں کو 24X7 ماحول میں خدمات فراہم  کی سہولت دی ۔ اے ٹی ایم نے گاہکوں کو جب بھی نقدی کی ضرورت ہو ، اُن کے قریب ترین اے ٹی ایم میں اُس کو میسّر کراکر اُن کی سہولت میں اضافہ کیا ہے ۔
مالیاتی اداروں نے اپنے اے ٹی ایم میں سیکورٹی اپ گریڈ اَور دھوکہ دھڑی کے لئے گنجائش کم کرنے کی کی کئی حکمت عملیاں لاگو کی ہے ۔ اِن میں شامل ہیں اے ٹی ایم کی تنصیب کے لئے محفوظ مقام کا انتخاب ، نگرانی ویڈیو کیمروں کی  تنصیب، دور نگرانی کی تنصیب ، کارڈ کی معلومات غیر مستند طورپر پڑھ‌کر نِکال لئے جانے کے خلاف حل ، اَور اے ٹی ایم یا انٹرنیٹ پر لین دین کے وقت اُن کی ذاتی معلومات کی حفاظت کے مختلف طریقوں کی معلومات دےکر صارفین کی بیداری بڑھانا ۔

اے ٹی ایم دھوکہ دھڑی


جعلساز اے ٹی ایم کارڈ سلاٹ میں پلاسٹک کی فلم کا ایک حصہ تہہ کر ڈالتا تاکہ وہ کارڈ کو پکڑ لے اَور مشین کے ذریعے اُس کو باہر پھینکنے کی اجازت نہ دے ۔صارفین  سمجھتا ہے کی اُس کا کارڈ مشین میں پھنس گیا ہے اَور وہ نہیں جان پاتا ہے کہ کارڈ سلاٹ کے ساتھ چھیڑچھاڑ کی گئی ہے ۔
ایک بار ڈالا گیا کارڈ پھنس جاتا ہے تو جعلساز ایک جائز کارڈہولڈر کے طور پر شکار کو اپنا سکیورٹی کوڈ دوبارہ درج کرنے کا سجھاؤ دیتا ہے ۔ جب کارڈہولڈر آخرکار مایوس ہوکر چلا جاتا ہے ، تو جعلساز کارڈ نِکال‌کر خفیہ طور پر دیکھا گیا کوڈ درج کر دیتا ہے ۔ ایک اور طریقہ ہے چھوٹے کےمروں اَور " اسکِمرس " نامی ایسے آلات کے ذریعے مجتمع ڈیٹا کا استعمال جو بینک کھاتے کی معلومات  پکڑ‌کر رکارڈ کر لیتے ہیں ۔ اِس میں جوکھم کم ہوتا ہے کیونکہ اِس میں جعل ساز شکار کے درمیان کوئی بات چیت نہیں ہوتی اَور جعل ساز کی غیرموجودگی کارڈہولڈر کو تھوڑا زیادہ بےپرواہ بنا دیتی ہے اَور وہ پاس ورڈ کی حفاظت کے بارے میں کم چوکنا ہو جاتا ہے ۔
اے ٹی ایم دھوکہ دھڑی کا ایک اور دلچسپ طریقہ ہے جعل ساز کے ذریعے " ڈپلی کیٹ اے ٹی ایم " جِس میں ایسے سافٹویئر کا استعمال کیا جاتا ہے جو اُن مشینوں پر ٹائپ کئے گئے پاس ورڈ رِکارڈ کر لیتا ہے ۔ اُس کے بعد ڈپلی کیٹ کارڈ تیار کئے جاتے ہیں اَور چوری کے پاس ورڈ کا استعمال کر پیسے نِکالے جاتے ہیں ۔ کبھی کبھی ایسی دھوکہ دھڑی اندرونی ہوتی ہے جِس میں کارڈ جاری کرنے والی کمپنی کے اہلکاروں کی ملی بھگت ہوتی ہے ۔ ایسی دھوکہ دھڑی کا طریقہ چاہے جو کچھ بھی ہو لیکِن یہ یقینی طورپر غیر قانونی ہے اَور وابستہ ملک کے قانون کے مُطابق قابل سزا جرم ہے ۔ ہالانکہ سزا کے باوجوُد مُمکِن ہے کہ اِس عمل میں کھو گیا رقم واپس نہیں مِلے ۔ اس طرح ، ایک مجرم کو سزا ہالانکہ دیگر مجرموں کے لئے احتیاطی ثابت ہوں‌گی پھِربھی یہ چوری کی جائیداد کی بہالی کا سب سے اچھا طریقہ نہیں ہو سکتا ۔ اس لئے ، احتیاطی نگرانی اَور اے ٹی ایم دھوکہ دھڑی جوکھم بیمہ کرانا صحیح نقطہٴ نظر معلوم ہوتا ہے ۔

احتیاط سے استعمال


اے ٹی ایم کا استعمال کرتے وقت ہوشیار رہیں ، خاص کر تب جبکہ نقد حاصل ہو رہا ہو ۔ اُس دوران اِن احتیاطی تدابیر پر عمل کریں :

  • ہمیشہ اے ٹی ایم کے آس پاس مشتبہ افراد یا سرگرمی کے فی چوکنا  رہیں اَگر آپ کو کچھ بھی عجیب دِکھائی دیں ، تو وہاں سے نِکل جائیں اور پھر کبھی ( ضرورت پڑنے پر ) واپس آئیں ۔
  • اَندھیرے کے وقت کِسی دوست کے ساتھ جائیں ۔
  • ایک اچھی طرح سے اُجلے علاقے میں اے ٹی ایم کے پاس کی گاڑی پارک کریں ، اپنی کار کو لاک کریں ۔
  • اپنا ایکسیس کوڈ درج کرتے وقت اپنے جسم کا ایک ڈھال‌کے طور پر استعمال کریں  ، تاکہ ٹائپ کرتے وقت کوئی اُس کو دیکھ نہ پائیں ،
  • اپنے لین دین کی تمام رسیدیں  اپنے ساتھ لے جائیں ، اُن کو اے ٹی ایم کے پاس نہیں پھینکیں ، اَگر آپ کو نقدی مِل جائے تو اُس کو لےکر دور جائیں ، اے ٹی ایم کے سامنے کھَڑے ہوکر نہیں گِنیں ،
  • اجنبیوں سے اے ٹی ایم کے لئے کبھی مدد منظور نہیں کریں ، مدد کے لئے بینک سے پوچھیں ،
  • اپنا ایکسیس کوڈ یاد رکھیں ، اُس کو کہیں نہیں لِکھیں اَور / یا اپنے ساتھ نہیں رکھیں ،
  • ایسے ایکسیس کوڈ کا استعمال نہ کریں جو آپ کے جیب میں موجود دیگر الفاظ یا نمبر کے مانِند ہوں ،
  • اپنا ایکسیس کوڈ کبھی کسی کو نہیں بتائیں ! ( بینک اہلکاروں ، پولس سَمیت ) ،
  • اپنا اے ٹی ایم کارڈ کبھی کسی کو نہیں دیں ، اِس کو نقد یا کریڈِٹ کارڈ کی طرح سمجھیں ،
  • اَگر آپ کا اے ٹی ایم کارڈ کھو جائے ، تو اپنی بینک یا کریڈِٹ یونین کو فوراً مطلع کریں ۔

بینکنگ سجھاؤ


وقت پر ایس ایم ایس اَور اِی میل پیغام حاصل کرنے کے لئے اپنے موبائل نمبر اَور ای میل بینکنگ لین دین کے لئے فعال کریں ،

  • آپ کا مالیاتی ادارہ یا بینک آپ کے بینکنگ تفصیل آن لائن درج کرنے کے لئے کبھی اِی میل نہیں بھیجتا ہے ،
  • باقاعدگی سے اپنے کریڈِٹ کارڈ یا بینک کھاتے کی تفصیل کی جانچ کریں اَور اپنے لین دین کا حساب کتاب رکھیں ،
  • چیک بک ، اسٹیٹمنٹ ، ڈےبِٹ / کریڈِٹ کارڈ کی صحیح پتے پر حصولیابی کے لئے پتے میں تبدیلی جیسے تفصیل ابڈیٹ کریں ،
  • فِشِنگ حملوں سے حفاظت کے لئے آپ کے براؤزر میں فلٹر فِشِنگ ہونا چاہئے اَور اپنے اِی میل میں اب ڈیٹ کرنے یا لین دین کے لئے کبھی کِسی لِنک پر کلِک نہ کریں ۔
  • ایک مضبوت اَور یاد رکھنے لائق آسان پاس ورڈ بنائیں اَور اُس کو باقاعدگی سے بدلتے رہیں ۔ وِشِنگ ایک قسم کی فِشِنگ ہے ، جہاں ذاتی معلومات دینے میں پھانسنے کی کوشش کے لئے اِی میل دینے کے بجائے مجرم  بینک یا کریڈِٹ یونین کے گاہک سے اہم معلومات نِکالنے کے لئے ایک براہ راست یا خود کار فون کا استعمال کرتا ہے ۔
  • کِسی بینک یا کریڈِٹ کارڈ فراہم کنندہ سے ایک کال حاصل ہونے پر اپنی ذاتی معلومات  دینے سے اپنے آپ کو روکنے کا ہر ممکن حد تک کوشش کریں ۔

اے ٹی ایم صارفین کے لئے سجھاؤ

  1. اے ٹی ایم مشین میں کچھ بھی غیر معمولی دِکھنے  والی بات سے ہوشیار رہیں، جیسے عجیب دِکھنے  والے آلہ یا آلہ کے ساتھ منسلک تار،
  2. "چھیڑچھاڑ نہیں (نو ٹیمپرگ)" نشان دیکھیں. بدمعاش کسی نئے آلے کے بارے میں شوقین لوگوں کو روکنے کے لئے انہیں لگا دیتے ہیں،
  3. ایک جام اے ٹی ایم مشین سے بچیں جو گاہکوں کو ایسی اے ٹی ایم مشین کے استعمال کے لئے مجبور کرتی ہے جسمیں  اسكمر لگا ہو۔ اکثر مجرم علاقے میں دیگر اے ٹی ایم کو غیر فعال کر دے گا تاکہ صارفین اس مشین پر اپنی طرف متوجہ ہوں جس اسكمر لگا ہوں،
  4. گاہکوں کو آپ کے بینک اکاؤنٹس کی باقاعدہ جانچ كر یہ متعین کر لینی چاہئے کہ کوئی غیر معمولی یا غیر مستند  لین دین تو نہیں ہو رہا ہو. وفاقی قوانین میں اے ٹی ایم دھوکہ دھڑی سے ہوا نقصان محدود ہے اور بہت بینک اضافی تحفظ فراہم کرتے ہیں،
  5. تفصیل کے لئے صارفین کو اپنے مالیاتی ادارہ کے ساتھ رابطہ کرنا چاہئے,
  6. اگر آپ کسی اے ٹی ایم کے ارد گرد غیر معمولی یا مشتبہ کچھ بھی دکھائی دیں، یا اگر آپ کو اپنے بینک اکاؤنٹ میں غیر مستند اے ٹی ایم لین دین ملے، تو فوری طور پر مقامی قانون نافذ کرنے والے اور ساتھ ہی اپنے مالیاتی ادارے اور / یا بینک کو مطلع کریں

ماخذ -


اطلاع،حفاظت،تعلیم اَور بیداری ( ISEA ) ، سی ڈیک ، حیدر آباد

3.5
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top