ہوم / صحت / زندگی کے سچ / بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت

اِس مضمون میں بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت میں تفصیل سے معلومات دی گئی ہے۔

بچپن کے پہلے آٹھ سال بےحد اہم ہوتے ہیں،خاص کر پہلے تین سال۔یہ وقت مستقبل کی صحت،اضافہ اَور ترقی کی بنیاد ہوتی ہے۔دُوسرے کسی بھی وقت کے مقابلے اس دوران بچّے تیزی سے سیکھتے ہیں۔شير خوار بَچّے اَور بچّے تب اَور جلدی بالیدگی اور کہیں زیادہ تیزی سے سیکھتے ہیں،جب اُن کو پیار اَور لگاؤ،دھیان،بڑھاوا اَور دماغی اشتعال کے ساتھ ہی قوت بخش کھانا اَور صحت کی اَچّھی دیکھ بھال مِلتی ہے۔تمام بچّوں کو پیدائش کے وقت قانونی نامزدگی،صحت کی دیکھ بھال،اَچھی پرورش،تعلیم اَور نقصان کی بھرپائی،بد سلوکی اَور امتیازی سلوک سے تحفظ حاصل کرنے کا حق ہے۔یہ متعین کرنا ماں۔باپ اَور حکومتوں کا فرض ہے کہ اِن حقوق کو اعزاز،محفوظ اَور پُورا کیا جا رہا ہے یا نہیں۔

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت اہم پیغام۔1

پہلے آٹھ سال میں،اَور خاص کر پہلے تین سال کے دوران،بچّے کی دیکھ بھال اَور دھیان بہت ضروری ہے اَور اِس کا اثر بچّے کے پُوری زندگی پر پڑتی ہے۔

شروعاتی سالوں میں دیکھ بھال اَور دھیان بچّوں کے پھلنے۔پھُولنے میں مدد دیتا ہے۔بچّوں کو تھامنا،گود لینا اَور باتیں کرنا اُن کی برتری کو اُکساتا ہے۔ماں کے قریب اَور بھُوکا ہوتے ہی اُس کو ماں کا دودھ مِلنا،بچّے میں تحفظ کا احساس بھرنے کا کام کرتا ہے۔بچّوں کو ماں کے دودھ کی ضرورت پرورش اَور سُکھ۔چین دونوں کے لئے ہوتی ہے۔

لڑکا ہو یا لڑکی،دونوں کی ایک جیسی جسمانی،جذباتی،دماغی اَور معاشرتی ضروریات ہوتی ہیں۔سیکھنے کی صلاحیت دونوں میں برابر ہوتی ہے۔دلار،دھیان اَور بڑھاوے کی ضرورت دونوں کو ہوتی ہے۔

چھوٹے بچّے روکر اپنی ضروریات بتاتے ہیں۔بچّے کے رونے پر فوراً حرکت میں آنا،اُس کو اُٹھانا اَور مزے سے باتیں کرنا اُس میں اعتماد اَور حفاظت کی سمجھ پیدا کرے‌گا۔

جِن بچّوں میں خون کی کمی ہو،بَدپَروردَہ ہوں یا بار۔بار بیمار پڑ جاتے ہوں،وہ صحت مند بچّوں کے مقابلے ڈر اَور پریشانی کا شکار آسانی سے ہو سکتے ہیں اَور جو اُن میں کھیلنے کُودنے،کھوج بین کرنے یا دُوسروں سے مِلنے جُلنے کی چاہت کا فقدان پَیدا کرے‌گا۔

ایسے بچّوں کو کھانے پینے کے لئے خاص دھیان اَور بڑھاوے کی ضرورت ہوتی ہے۔

بچّوں کے جذبات سَچّے اَور طاقتور ہوتے ہیں۔اَگر بچّے کچھ کر پانے یا جو اپنی پسند کی چیز پانے میں ناقابِل ہیں،تو وہ کُند ہو سکتے ہیں۔بچّے اکثر اجنبی لوگوں سے یا اَندھیرے سے ڈرتے ہیں۔جِن بچّوں کی حرکتوں پر ہنسا جاتا ہے،اُن کو سزا دی جاتی ہے،وہ بَڑے ہوکر شَرمیلے اَور اپنی جذبات عام طور پر رکھنے میں ناقابِل ہو سکتے ہیں۔دیکھ بھال کرنے والے اَگر بچّوں کے دل کے جذبات کے فی صبر اَور ہمدردی رکھا جاتا ہے تو اُس کے  زِندَہ دِل،محفوظ اَور متوازن طریقے سے بڑھنے کے امکان زیادہ ہوتے ہے۔

جسمانی سزا یا تشدد کا مظاہرہ بچّے کی ترقی کو نقصان پہُنچا سکتا ہے۔غصّے میں جِن بچّوں کو سزا دی جاتی ہے،خود اُن کے تشدد آمیز ہونے کے امکان اَور بڑھ جاتے ہیں۔واضح بات ہے کہ بچّوں کو کیا کرنی چاہئے،ٹھوس قوانین کہ کیا نہیں کرنی چاہئے اَور اَچھے عمل کی شاباشی،بچّوں کو طبقہ اَور پریوار کا کھَرا اَور بار آور حصہ بنائے جانے کے کہیں زیادہ کارگر طریقے ہیں۔

دونوں ماں باپ کے ساتھ ہی پریوار کے دُوسرے ممبران کو بھی بچّوں کی دیکھ بھال میں شامل کئے جانے کی ضرورت ہے۔والد کا کردار خاص طور پر اہم ہوتا ہے۔والد پیار،لگاؤ اَور اشتعال پانے کی بچّے کی ضروریات پُوری کرنے کی کوشش کو متعین کر سکتا ہے کہ بچّے کو اَچّھی تعلیم،اَچھی پرورش مِلے اَور اُس کی صحت کی صحیح دیکھ بھال ہو۔والد تحفظ اَور تشدد سے پاک ماحول کو بھی متعین کر سکتا ہے۔والد گھریلو کام میں بھی ہاتھ بنٹا سکتا ہے،خاص کر تب جب ماں بچّے کو دودھ پِلا رہی ہو۔

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت اہم پیغام۔2

پیدا ہونے کے ساتھ ہی بچّے تیزی سے سیکھنے لگتے ہیں۔اَگر اُن کو متناسب غذا  اَور صحت کی صحیح دیکھ بھال کے ساتھ دلار،دھیان اَور شاباسی مِلے تو وہ تیزی سے بڑھتے ہیں اَور جلدی سیکھتے ہیں۔

اپنے سے چِپکاکر رکھنا اَور پیدا ہونے کے ایک گھنٹے کے اندر بچّے کو ماں کا دودھ پِلانا،بچوں کے بہتر اضافہ اَور ترقی میں مدد کرتا ہے اَور ماں کے ساتھ بچّے کا خاص رشتہ قائم کرتا ہے۔

چھُونا،سُننا،سونگھنا،دیکھنا اَور چکھنا،سیکھنے کے وہ اوزار ہیں،جِن سے بچّہ اپنے آس پاس کی دنیا کو پرکھنے کی کوشش کرتا ہے۔

جب بچّوں سے بات کی جاتی ہے،اُن کو چھُوا جاتا ہے اَور گَلا لگایا جاتا ہے،اَور جب وہ جانا۔پہچانا چہرہ دیکھتا ہے،آشنا آوازیں سُنتے ہیں اورطرح طرح کی چیزیں تھامتے ہیں تو اُن کا دماغ تیزی سے بڑھتا ہے۔پیدائش سے ہی جب وہ پیار اَور تحفظ کا تجربہ کرتے ہیں اَور جب مسلسل کھیلتے ہیں اَور پریوار کے لوگوں سے گھُلتے مِلتے ہیں،تو تیزی سے سیکھتے ہیں۔حفاظت کا تجربہ کرنے والے بچّے عام طور پر اسکول میں اوّل ہوتے ہیں اَور زندگی کی پریشانیوں کا مقابلہ آسانی سے کرتے ہیں۔

مانگے جانے پر پہلے چھے مہینے تَک صرف ماں کا دودھ،چھے مہینے کی عمر پر محفوظ اَور متناسب غذا  مِلنے کی صحیح وقت پر شروعات،اَور دو سال یا اُس سے زیادہ وقت تَک ماں کے دودھ کا استعمال بچّے کو پرورش اَور صحتی فائدہ میسّر کراتا ہے،ساتھ ہی ساتھ دیکھ بھال کرنے والوں سے لگاؤ اَور رشتہ بناتا ہے۔

بچّوں کے لئے ترقی اَور نصیحت کا سَب سے ضروری راستہ دُوسروں سے اُن کا میل جول ہوتا ہے۔ماں۔باپ اَور دیکھ بھال کرنے والے بچّے کے ساتھ جِتنی باتیں کریں‌گے اَور اُس پر دھیان دیں‌گے،بچّا اُتنی ہی تیزی سے سیکھے‌گا۔نوزائیدہ اَور چھوٹے بچّوں کے سامنے ماں۔باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کا بات کرنا،پڑھنا اَور گانا چاہئے۔بچّے اَگر لفظ سمجھنے لائق نہ ہوں توبھی یہ ' بات چیت ' اُن کی زبان اَور سیکھنے کی صلاحیت کی ترقی کرتی ہے۔

دیکھ بھال کرنے والے بچّوں کو دیکھنے،سُننے،پکڑنے اَور کھیلنے کے لئے نَئی اَور دلچسپ چیزیں دےکر اُن کے سیکھنے اَور بڑھنے میں مدد کر سکتے ہیں۔

شير خوار بَچَّوں اَور چھوٹے بچّوں کو لَمبے وقت کے لئے اَکیلے نہیں چھوڑا جانا چاہئے۔یہ اُن کی جسمانی اَور دماغی ترقی کی رفتار کو دھیما کر دیتا ہے۔

لڑکیوں کو بھی غذا،دھیان،لگاؤ اَور دیکھ بھال کی اُتنی ہی ضرورت ہوتی ہے،جِتنے لڑکوں کو  سیکھنے یا کچھ نَیا کہنے پر تمام بچّوں کو بڑھاوا اَور اُن کی تعریف کئے جانے کی ضرورت ہے۔

اَگر بچّے کی جسمانی یا دماغی برتری صحیح سے نہیں ہو رہی ہے تو ماں باپ کو صحت کارکن سے صلاح لینے کی ضرورت ہے۔

مادری زبان میں بچّوں کی پڑھائی سب سے پہلے اُن کو سوچنے اَور خود کو اظہار کرنے کی صلاحیت کی ترقی میں مدد کرتا ہے۔گانوں،نانی۔دادی کی کہانیوں،شاعری اَور کھیلوں کے ذریعے بچّے زبان کو جلدی اَور آسانی سے سیکھتے ہیں۔

جِن بچّوں کا وقت سے جدرین کاری پُورا ہوا ہو اَور جِن کو مناسب غذائیت مِل رہی ہو،اُن کے زندہ رہنے کے امکانات کو بڑھاتا ہے اَور اُن میں گھُلنے۔مِلنے،کھیلنے۔کُودنے اَور سیکھنے کا رحجان زیادہ ہوتا ہے۔ یہ صحت پر پریوار کے خرچ،بیماری کی وجہ سے اسکول سے بچّے کی غیر حاضری اَور بیمار بچّے کی دیکھ بھال میں ماں باپ کی آمدنی کے نقصان کو کم کرے‌گا۔

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت اہم پیغام۔3

کھیلنے اَور کھوج بین کے لئے مِلنے والا بڑھاوا بچّوں کو سیکھنے اَور اُن میں سماجی،جذباتی،جسمانی اَور دماغی ترقی میں مدد کرتا ہے۔

بچّے مزے کے لئے کھیلتے ہیں،لیکِن کھیل اُن کے سیکھنے اَور ترقی کرنے کی کنجی بھی ہے۔کھیلنے سے بچّوں کے علم اَور تجربے کو شکل لینے اَور اُن کی تجسس اَور اعتماد کی ترقی میں مدد مِلتی ہے۔

بچّے چیزوں کو آزماتے ہوئے،نتیجوں  کا موازنہ کرتے ہوئے،سوال پوچھتے ہوئے اَور چنوتی کا مقابلہ کرتے ہوئے سیکھتے ہیں۔کھیلنا،زبان سیکھنے،سوچنے،منصوبہ بنانے،مُتَّحِد ہونے اَور فیصلہ لینے کے استعداد کی ترقی کرتا ہے۔

اَگر بچّا معذور ہے،تو اشتعال اَور کھیل کی ضرورت خاص طور پر بڑھ جاتی ہے۔

لڑکیوں اَور لڑکوں کے کھیلنے اَور پریوار کے تمام ممبروں سے گھُلنے مِلنے کے مانِند موقع کی ضرورت ہوتی ہے۔والد کے ساتھ کھیل اَور میل جول دونوں کے درمیان مضبوت رشتہ بنانے میں مددگار ہوتا ہے۔

پریوار کے لوگ اَور بچّوں کی دیکھ بھال کرنے والے بچّوں کو صاف-صاف ہدایات کے ساتھ معمولی کام سونپ‌کر،کھیلنے کی چیزیں دےکر اَور کھیل پر دبدبا بنائے بغیر نَئی سرگرمیاں سُجھاکر سیکھنے میں بچّوں کی مدد کر سکتے ہیں۔بچّے پر قریبی نگاہ رکھیں اَور اُن کے خیالات پر غور کریں۔

بغیر کِسی کی مدد کے چھوٹا بچّہ اَگر کوئی کام کرنے کی ضد کرے تو اُن کی دیکھ بھال کرنے والوں کو صبر سے کام لینے کی ضرورت ہے۔بچّے کامیابی مِلنے تَک کوشش کرکے سیکھتے ہیں۔جب تک بچّا کِسی خطرے سے دور ہے،نَیا اَور مشکل کام کرنے کی جدوجہد بچّے کی ترقی کے لئے اَچھا قدم ہے۔

تمام بچّوں کو اپنی ترقی کی حالت کے مطابق طرح۔طرح کے آسان چیزوں سے کھیلنے کی ضرورت ہے۔پانی،ریت،گتّے کے بکسے،لکڑی کے گٹکے،برتن اَور ڈھکّن کھیلنے کا اُتنا ہی اَچھا سامان ہیں،جِتنے کہ دکان سے خریدے گئے کھلونے۔

بچّے مسلسل قابلیتوں کو بدلتے اَور بڑھاتے رہتے ہیں۔

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت اہم پیغام۔4

بچّوں کے ساتھ برتاؤ کَیسے کیا جائے ؟ بچّے اپنے قریبی لوگوں کے رویے کی نقل اُتار‌کر سیکھتے ہیں۔

دُوسروں کو دیکھتے اَور اُن کے جیسا بنتے ہوئے چھوٹے بچّے معاشرتی رویہ کا طور طریقہ سیکھتے ہیں۔وہ سیکھتے ہیں کہ کون سا برتاؤ ٹھیک ہے اَور کون سا نہیں۔

بَڑے۔بزرگوں  اَور اپنے سے بَڑے بچّوں کا مثال بچّے کے برتاؤ اَور شخصیت کی تعمیر میں بَڑا اثر ڈالتا ہے۔بچّے دُوسروں کی نقل کرکے سیکھتے ہیں،نہ کہ دُوسروں کے بتانے سے کہ یہ کرو۔اَگر بَڑے چیختے۔چِلّاتے اَور تشدد آمیز برتاؤ کرتے ہیں،تو بچّے بھی وہی سیکھیں‌گے۔بَڑے اَگر دُوسروں کے ساتھ بھلائی،عزّت اَور صبر کے ساتھ پیش آتے ہیں،تو بچّّہ بھی اِسے دوہرائے‌گا۔

بچّے بہانے بناتے ہیں۔ اِس کو بڑھاوا دیا جانا چاہئے،اس لئے کہ بہانہ بنانا بچّوں کی تخیلیت کی ترقی کرتا ہے۔ یہ بچّوں کو دُوسرے لوگوں کے برتاؤ کے طریقوں کو سمجھنے اَور اُس کو منظور کرنے میں بھی مدد کرتا ہے۔

بچّوں کی ترقی اَور شروعاتی نصیحت اہم پیغام۔5

ماں باپ اَور بچّوں کی دیکھ بھال کرنے والوں کو خطرہ کے اُن نشانات کو جاننا چاہئے جو ظاہر  کرتے ہیں کہ بچّوں کی برتری اَور ترقی ڈگ مگ ہے۔

ماں۔باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو اُن اہم پڑاؤوں کو جاننے کی ضرورت ہے،جو دِکھاتے ہیں کہ بچّے کی ترقی عام طور پر ہو رہا ہے۔اُن کو یہ بھی جاننے کی ضرورت ہے کہ جسمانی یا ذہنی طور پر کمزور بچّوں کو کب مدد کی جانی ہے اَور اُن کو دیکھ بھال اَور پیار کا ماحول کس طرح دیا جانا ہے۔

تمام بچّے ایک جیسے طریقوں سے بڑھتے اَور افزائش پاتے ہیں،لیکِن ہرایک بچّے کی ترقی کی اپنی رفتار ہوتی ہے۔

یہ غور کریں کہ بچّا رابطہ،آواز اَور مناظر پر کیا رد عمل دیتا ہے۔ماں باپ ترقی سے منسلک دقتوں یا معذوری کی پہچان‌کر سکتے ہیں۔اَگر بچّا سست رفتار سے افزائش پا رہا ہے تو ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والے بچّوں کے ساتھ اضافی وقت گُزار‌کر،کھیل‌کر اَور اُس سے باتیں کر،اَور بچّے کی مالش کر مدد کر سکتے ہیں۔

شاداں کرنے اَور دھیان کھینچے جانے کے باوجوُد اَگر بچّہ بے اثر رہتا ہے تو ماں۔ باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو کِسی تربیت صحتی اہلکار سے مدد لینے کی ضرورت ہے۔معذور بچّوں کی صلاحیتوں کی مُکَمَّل ترقی میں مدد کے لئے شروعاتی پہل بہت ضروری ہے۔بچّے کی صلاحیت زیادہ سے زیادہ افزائش کرنے کے لئے ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو بڑھاوا دئے جانے کی ضرورت ہے۔

معذوریت کا شکار لڑکا یا لڑکی کو کچھ زیادہ دلار دئے جانے اَور احتیاط برتے جانے کی ضرورت ہوتی ہے۔تمام بچّوں کی طرح معذور بچّوں کے لئے بھی پیدائش کے وقت یا اُس کے فوراً بعد جنم نامزدگی،ماں کے دودھ،جدرین کاری،متناسب غذا اَور بد سلوکی اَور تشدد سے بچاؤ کی ضرورت ہے۔معذور بچّوں کو کھیلنے اَور دُوسرے بچّوں سے گھُلنے۔مِلنے کے لئے بڑھاوا دیا جانا چاہئے۔

جو بچّا خوش نہیں ہیں یا جذباتی اَور پریشانیوں سے گھِرا ہوا ہے،اُس کا برتاؤ غیر معمولی ہو سکتا ہے۔مثال کے طور پر اچانک غیر دوستانا،دُکھی،سست،عدم تعاونی اَور شرارتی ہو جانا،اکثر رونا،دُوسرے بچّوں کے فی تشدد آمیز ہو جانا،دوستوں کے ساتھ کھیلنے کے بجائے اَکیلے رہنا یا اچانک روزمرہ کے کاموں یا پڑھائی۔لکھائی میں دلچسپی نہ لینا،بھوک اَور نیند میں کمی آ جانا۔

سرپرستوں کو پرجوش کیا جانا چاہئے کہ وہ بچّوں سے بات کریں اَور اُن کو سُنیں۔مسئلہ اَگر دور نہیں ہوتی ہو،تو استاد یا صحت کارکن کی مدد لیں۔

اَگر بچّے کو دماغی یا جذباتی پریشانی ہے یا اُس کے ساتھ بد سلوکی ہوئی ہو تو اَگلِی مشکلوں سے بچانے کے لئے اُس کو صلاح دی جانی چاہئے۔

آگے دی گئی ہدایات ماں باپ کو یہ معلومات دیتا ہے کہ بچّے کَیسے بڑے ہوتے ہیں۔تمام بچّوں کی برتری اَور اُن کی ترقی میں فرق ہوتا ہے۔دھِیمی ترقی عمومی ہو سکتی ہے یا ضرورت سے کم پرورش،خراب صحت،محرک کا فقدان یا کہیں زیادہ سنگین دقتوں کی وجہ سے ہو سکتی ہے۔بچّے کی ترقی کے بارے میں ماں باپ تربیت یافتہ صحتی کارکن یا استاد سے بات کرنے کی خواہش کر سکتے ہیں۔

بچّے کَیسے بالیدگی پاتے ہیں

ایک مہینے تَک

بچّا کرنے میں لائق ہوں :

  • رخسار یا منھ کو سہلا رہے ہاتھوں کی طرف سر گھُمائیں
  • منھ تَک دونوں ہاتھ لے جائیں
  • آشنا آواز اَور صداؤں کی طرف پلٹیں
  • ماں کا دودھ پیئیں اَور ماں کا پستان اپنے ہاتھوں سے چھُوئیں

ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو صلاح

  • پیدائش کے ایک گھنٹے کے اندر ماں سے قریبی بنے اَور ماں کا دودھ مِلے
  • بچّے کو سِیدھا اُٹھانے پر اُس کے سر کو سہارا دیں
  • بچّے کی اکثر مالش کریں اَور اُس کو گود میں لیں
  • بچّے کو ہمیشہ قرینے سے گود میں لیں،بھلے ہی آپ تھکے اَور پریشان ہوں
  • بار۔بار بچّے کو ماں کا دودھ پِلائیں،کم از کم چار گھنٹے پر
  • جِتنا مُمکِن ہو سکے،بچّے سے بات کریں،اُس کے سامنے پڑھیں اَور گانا گائے
  • پیدائش کے چھے ہفتہ بعد نوزائیدہ بچہ کے ساتھ صحتی کارکن سے مِلیں

مندرجہ ذیل خطرناک اشارہ،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے-

  • صحیح سے ماں کا دودھ نہ پینا یا پینے سے مَنا کرنا
  • ہاتھ اَور پیر کا کم چلنا
  • اُونچی آواز یا تیز روشنی پر کم دھیان دینا یا بے اثر ہو جانا
  • بِنا کِسی وجہ کے لَمبے وقت تَک رونا
  • اُلٹی اَور دست کرنا،جو جسم میں پانی کی کمی پیدا کر سکتا ہے
  • چھے مہینے تَک

    بچّہ کرنے میں قابل ہوں

    • پیٹ کے بل لیٹنے پر سر اَور سینہ اُٹھائے
    • جھولتی چیزوں پر لپکے
    • چیزوں کو پکڑے اَور ہِلائے
    • دونوں طرف کروٹ لیں
    • سہارے کے ذریعے بیٹھے
    • ہاتھ اَور منھ سے چیزوں کو سمجھے
    • آوازوں اَور چہروں کے تاثرات کی نقل اُتارنے کی شروعات کریں
    • اپنا نام اَور گھیرلو چہروں کو دیکھ‌کر دھیان دے

    ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو صلاح

    • بچّے کو صاف۔سُتھرے،سَپاٹ اَور محفوظ جگہ پر لِٹائیں تاکہ وہ مزے سے گھوم۔ پھر سکے اَور چیزوں تَک پہُنچ سکے۔
    • بچّے کو بیٹھنے کے لئے اس طرح ٹیک دیں یا اُس کو تھامیں کہ وہ اپنے آس پاس کی ہلچلوں کو دیکھ سکیں
    • دن ہو یا رات،بھوک لگنے پر بچّے کو ماں کا دودھ پِلانا جاری رکھیں اَور باقی کھانا دینے کی بھی شروعات کریں ؛ 6۔8 مہینے تَک دن میں دو بار،8۔12 مہینے تَک تین۔چاربار
    • جِتنا مُمکِن ہو بچّے کے ساتھ بات کریں،پڑھیں یا گانا گائیں

    مندرجہ ذیل خطرناک علامت،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے

    • پیروں میں کڑا پن یا اُس کو چلانے میں پریشانی
    • سر کو مسلسل ہِلانا (یہ کان میں پھَیلنے والے بیماری کا علاامت ہو سکتا ہے اَور اَگر علاج نہ کیا جائے تو بہرےپن کی طرف بڑھ سکتا ہے)
    • آوازوں،گھریلو چہروں یا ماں کے پستان پر کم دھیان دینا یا بالکل بے اثر ہو جانا
    • ماں کا دودھ یا دُوسرے کھانے کے لئے منع کرنا

    12 مہینے تَک

    بچّہ کرنے میں لائق ہو

    • بغیر کِسی سہارے کے بیٹھے
    • ہاتھ اَور گھٹنے کے بل چلیں اَور اُٹھ کھَڑا ہونے لگے
    • سہارا پاکر قدم بڑھائے
    • الفاظ اَور آوازوں کی نقل اُتارنے کی کوشش کریں اَور معمولی التجا پر غور کریں
    • کھیلنے اَور تالی بجانے کا مزہ لیں
    • لوگوں کا دھیان کھینچنے کے لئے آوازوں اَور اداؤں کو دوہرائیں
    • انگوٹھے اَور انگلی سے چیزوں کو اُٹھائے
    • چمّچ اَور کپ جیسی چیزوں کو پکڑنے اَور خود سے کھانا کھانے کی کوشش کی شروعات کریں

    ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو صلاح

    • چیزوں کی طرف اشارہ کریں اَور اُن کے نام لیں۔جب۔تب بچّے سے بات کریں اَور اُس کے ساتھ کھیلیں
    • کھانے کے وقت کا استعمال پریوار کے تمام ممبروں کے ساتھ میل جول بڑھانے میں کریں
    • اَگر بچّے کی ترقی دھیمی ہو یا اُس میں کوئی جسمانی معذوری ہے تو اُس کی صلاحیتوں پر زور دیں اَور اُس کو کچھ زیادہ بڑھاوا دیں اَور میل جول بڑھائیں
    • کئی گھنٹے تَک بچّے کو ایک جیسی حالت میں نہ چھوڑے
    • کِسی انہونی کو روکنے کے لئے بچّے کی جگہ،جِتنا مُمکِن ہو سکے،محفوظ بنائیں
    • ماں کا دودھ پِلانا جاری رکھیں اَور متعین کریں کہ بچّے کو بھرپور کھانا مِلے اَور اُس میں پریوار کے مختلف غذا بھی شامل ہوں
    • چمچ / کپ سے کھانا کھانے میں بچّے کی کوشش میں مدد کریں
    • یہ طئے کریں کہ بچّے کا پُورا جدرین کاری ہو اَور سُجھائے گئے تمام متناسب مادوں کی اُسے خوراک مِلیں

    مندرجہ ذیل خطرناک علامتیں،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے

    • پُکارنے پر بچّہ کوئی آواز نہ نِکالے
    • ہِلتی ڈُلتی چیزوں پر غور نہ کریں
    • بچّہ لاتعلق ہو اَور دیکھ بھال کرنے والے سے بےپرواہ ہو
    • بچّے کو بھوک نہ لگے یا کھانے سے منع کرے

    دو سال تَک

    بچّہ کرنے میں لائق ہو
    چلے،چڑھے اَور دوڑے
    • نام لینے پر چیزوں یا تصاویر کی طرف اشارہ کریں (جیسے ناک،آنکھ وَغیرہ)
    • کئی لفظ ایک ساتھ بولے (تقریباً 15 مہینے سے)
    • معمولی ہدایتوں کو لاگو کریں
    • پنسل یا کوئلے سے لکیریں کھینچے
    • آسان کہانیوں اَور گانوں کا مزہ لیں
    • دُوسرے کے رویہ کی نقل اُتارے
    • خود سے کھانا کھانے کی شروعات کریں

    ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو صلاح

    • بچّے کے سامنے پڑھے،گائے اَور اُس کے ساتھ کھیلیں
    • بچّے کو خطرناک چیزوں سے دور رہنے کی نصیحت دیں
    • بچّے کے ساتھ عام طریقے سے بات کریں،خود بچّہ نہ بن جائیں
    • ماں کا دودھ پِلانا جاری رکھیں اَور یہ متعین کریں کہ بچّے کو بھرپور کھانا مِلے اَور اُس میں پریوار میں کھائے جا رہے مختلف کھانے بھی شامل ہوں
    • بچّے کو کھانے کے لئے پرجوش کریں،لیکِن زور نہ ڈالیں
    • سرل طور۔طریقے بتائیں اَور جائز امید کریں
    • بچّے کی کامیابیوں کی تعریف کریں

    مندرجہ ذیل خطرناک علامات،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے

    • دُوسروں سے بےپرواہ رہیں
    • چلتے ہوئے خود کو سادھنے میں پریشانی محسوس کریں (تربیت یافتہ صحتی کارکن سے مِلیں)
    • چوٹ لگے اَور رویہ میں بےوجہ تبدیلی آئے (خاص طور پر اَگر بچّے کی دیکھ بھال کِسی دُوسرے کے ذمہ ہے)
    • بھوک کی کمی ہو

    تین سال تَک

    بچّہ کرنے کے قابل ہو
    • آسانی سے چلے،دَوڑے،مارے اَور کُودے
    • اشارہ کرنے پر چیزوں اَور تصاویر کو سمجھے اَور اُس کی شناخت کرے
    • دو یا تین الفاظ کے جملہ بنائے
    • اپنا نام اَور اپنی عمر بتائے
    • رنگوں کا نام لے
    • گنتی سمجھے
    • چیزوں کو کھیلنے کا ذریعہ بنائے
    • خود سے کھانا کھائے
    • لگاؤ ظاہر کرے

    ماں باپ اَور دیکھ بھال کرنے والوں کو صلاح

    بچّے کے ساتھ کتاب پڑھے اَور تصاویر پر بات کریں
    • بچّے کو کہانیاں سُنائیں اَور اُس کو شاعری اَور گانا سِکھائیں
    • بچّے کو کھانے کے لئے اُس کی تھالی کٹوری دیں
    • بچّے کو کھانے کے لئے بڑھاوا دینا جاری رکھیں اَور بچّے کے مطابق کھانے کے لئے اُس کو پُورا وقت دیں
    • بچّے کو کپڑا پہننے،ہاتھ دھونے اَور بیت الخلا کا استعمال سیکھنے میں مدد کریں

    مندرجہ ذیل خطرناک علامت،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے

    • کھیل میں دلچسپی نہ لینا
    • بار۔بار گِرنا
    • چھوٹِی چیزوں کو سادھنے میں دقت ہونا
    • معمولی باتوں کو نہ سمجھ پانا
    • کئی الفاظ کو جوڑ‌کر بولنے میں لائق نہ ہونا
    • کھانے میں کم دلچسپی یا کوئی دلچسپی نہ لینا

    پانچ سال تَک

    بچّہ کرنے کے لائق ہوں

    • چلنے میں تال میل بنائے
    • پُورا جملہ بولے اَور کئی الفاظ کا استعمال کرے
    • ایک دوسرے سے اُلٹ چیزوں کو سمجھے ؛ جیسے موٹا اَور پَتلا،لَمبا اَور ناٹا
    • دُوسرے بچّوں کے ساتھ کھیلے
    • خود سے کپڑے پہنے
    • آسان سوالوں کا جواب دیں
    • 5 سے 10 چیزوں کی گنتی کریں
    • اپنے ہاتھ صاف کئے

    ماں باپ اَور پالنے والوں کو صلاح

    بچّے کو سُنیں
    • بچّوں کے ساتھ اکثر گھُلے مِلیں
    • اَگر بچّہ ہکلاتا ہے تو اُس کو اَور دھِیمی رفتار میں بولنے کی صلاح دیں
    • کہانیاں پڑھیں اَور سُنائیں
    • بچّے کو کھیلنے اَور چھان بین کے لئے حوصلہ افضائی کریں

    مندرجہ ذیل خطرناک علامت،جِن پر دھیان دیا جانا چاہئے

    • کھیل میں بچّوں کی شراکت داری پر غور کریں،اَگر بچّہ ڈرا ہوا،غصے میں یا تشدد آمیز ہے تو یہ اُس کی جذباتی دقتوں یا اُس کے ساتھ ہوئی بد سلوکی کا علامت ہو سکتا ہے۔

    ماخذ : یونیسیف

2.72727272727
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top