ہوم / صحت / زندگی کے سچ / پیدائش کا وقتی تعین
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

پیدائش کا وقتی تعین

اِس مضمون میں پیدائش کا وقتی تعین کے موضوع میں تفصیل سے معلومات دی گئی ہے۔

بہت بار جنم دینا،ایک کے بعد ایک جنم دینا اَور نوخیز عمر کی لڑکیوں یا 35 سال سے زیادہ عمر کی خاتون کے ذریعے جنم دینا اُس کی زندگی کو خطرے میں ڈال دیتا ہے اَور بچوں کی ہونے والی تمام موتوں میں لگ بھگ ایک تِہائی کا ذمہ دار بن جاتا ہے۔

خاندانی منصوبہ بندی خواتین اَور بچّے کی صحت میں سُدھار‌کے سَب سے کارگر طریقوں میں ایک ہے۔ ترقی پذیر ممالک میں شادی شُدہ  یا مردوں کے ساتھ رہ رہی خواتین کا کہنا ہے کہ مانع حمل کی اُن کی ضروریات پُوری نہیں ہو پاتی ہیں۔ نوخیز عمر کے بچّوں سَمیت سبھی کی عالمگیری تعلیم کے ساتھ ہی خاندانی منصوبہ بندی کی خدمتوں تَک پہُنچ، خاصکر اُن ممالک میں جہاں کم عمر میں شادی ہو جاتی ہے، ماں اَور بچّے کی موت اَور معذوریت سے حفاظت کر سکے‌گی۔

پیدائش کا وقتی تعین اہم پیغام 1

18 سال کی عمر سے پہلے یا 35 سال کی عمر کے بعد حمل ٹہرنے کے سنسکار، خاتون اَور اُس کے بچّے کی صحت کے خطرات کو بڑھا دیتا ہے۔

ہرسال کوئی 515 لاکھ خواتین حاملہ ہونے اَور بچے کی پیدائش سے جُڑی دقتوں کی وجہ سے مر جاتی ہیں۔ مرنے والی ہر خاتون کے پیچھے اوسطاً 30 اَور خواتین معذوری پیدا کرنے والی سنگین دقتوں کا شکار ہو جاتی ہیں۔ خاندانی منصوبہ بندی اِن موتوں اَور کافی حد تک اِس معذوری کو روک سکتی ہے۔

لڑکی کے کم سے کم 18 سال کی عمر ہونے تَک حاملہ ہونے کو ٹالنا،محفوظ حمل و  بچے کی پیدائش کو مقرر کرے‌گا،اَور اُس کے بچّے کے کم وزن کا پیدا ہونے کے خطرہات کو کم کرے‌گا۔یہ خاص طور پر اُن ممالک کے لئے اہم ہے، جہاں کم عمر میں شادی کر دئے جانے کا رواج ہے۔

18 سال کی عمر ہونے تَک لڑکی جسمانی طور پر پیٹ میں بچّا پالنے لائق نہیں ہوتی۔بالغ خاتون کے مقابلے کم عمر کی لڑکیوں کے لئے بچے کی پیدائش کے مشکل اَور خطرناک ہونے کا اندیشہ زیادہ رہتا ہے۔ بہت کم عمر کی ماؤں سے پیدا ہونے والے بچّوں میں زندگی کے پہلے سال میں مر جانے کا اندیشہ اور بھی زیادہ ہوتا ہے۔ماں جِتنی چھوٹِی ہوگی،اُس پر اَور اُس کے بچّے پر خطرہ اُتنا ہی بَڑا ہوگا۔

حاملہ ہونے کو ٹالنے کے لئے جوان خواتین کو خاص مدد کی ضرورت ہوتی ہے۔ وقت سے پہلے حمل ٹہرنے کے خطرہات اَور اُس کو ٹالنے کے بارے میں جوان خواتین اَور اُن کے پریواروں کو معلومات دی جانی چاہئے۔

35 سال کی عمر کے بعد حاملہ ہونے اَور بچہ پیدا کرنے کے خطرہ پھر سے بڑھنے لگتے ہیں۔اَگر کوئی خاتون 35 سال کی ہے اَور چار یا زیادہ بار حاملہ ہو گئی ہے،تو ایک اَور حمل ٹہرنا اُس کے اَور اُس کے جنین کی صحت کے لئے سنگین خطرہ بن سکتا ہے۔

پیدائش کا وقتی تعین اہم پیغام 2

اَگر دو بچّوں کی پیدائش کے درمیان دو سال سے کم کا فرق ہے تو چھوٹے بچّوں کی موت کا خطرہ 50 گنا بڑھ جاتا ہے۔

دو سال سے کم عمر کے بچّے کی صحت اَور اُس کی بالیدگی کے لئے سَب سے بَڑا خطرہ نَئے بچّے کی پیدائش ہوتا ہے۔ اِس سے بَڑے بچّے کے لئے ماں کا دودھ پینا بہت جلدی رُک جاتا ہے، اَور بچّے کی ضرورت کے حساب سے خاص طور پر کھانا تیار کرنے کے لئے ماں کو کم وقت مِل پاتا ہے۔ ہو سکتا ہے کہ وہ بَڑے بچّے کی اُتنی دیکھ بھال اَور دھیان نہ کر سکے، جِتنی کہ اُس کو ضرورت ہے، خاصکر جب بچّا بیمار ہو۔ نتیجہ میں، دو سال یا اُس سے زیادہ وقت کے فرق سے پیدا ہوئے بچّوں کے مقابلے،دو سال سے کم وقت کے فرق پر پیدا ہوئے بچّوں کی جسمانی یا دماغی ترقی عام طور پر صحیح سے نہیں ہو پاتی ہے۔

حاملہ ہونے اَور بچے کی پیدائش کی بھرپائی کے لئے خاتون کے جسم کو دو سال کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لئے اَگر دو پیدائش کے درمیان کا وقت بہت کم ہو تو ماں کی صحت پر خطرہ رہتا ہے۔ دوبارہ حاملہ ہونے سے پہلے ماں کو اپنی صحت، پرورش کی حالت اَور توانائی کو واپس پانے میں وقت کی ضرورت ہوتی ہے۔ مردوں کو دو سال کے فرق پر ہونے والی پیدائش کی اہمیت کو لےکر خبردار رہنے اَور پریوار کی صحت کو بچانے میں مدد کرنے کے لئے حمل ٹہرنے کی تعداد کم کرنے کی ضرورت ہے۔

گزشتہ حمل ٹہرنےکی پُوری بھرپائی سے پہلے اَگر خاتون پھر حاملہ ہو جاتی ہے،تو اِس کے بَڑے امکان ہیں کہ اُس کے بچّے کی پیدائش وقت سے بہت پہلے ہوگی اَور اُس کا وزن بہت کم ہوگا۔ سامانیہ وزن کے پیدا ہوئے بچّوں کے مقابلے کم وزن کے پیدا ہوئے بچّوں کی صحیح بالیدگی کے امکان کم ہوتے ہیں، بیمار پڑنے کے زیادہ امکان اَور زندگی کے پہلے سال میں مر جانے کے امکان چارگنا زیادہ ہوں گے۔

پیدائش کا وقتی تعین اہم پیغام 3

چاربار حاملہ ہونے کے بعد حاملہ ہونے اَور بچے کی پیدائش سے صحت پر خطرے بڑھ جاتے ہیں۔

لگاتار حاملہ ہونے، بچے کی پیدائش، بچّے کو اپنا دودھ پِلانے اَور چھوٹے بچّے کی دیکھ بھال سے خاتون کا جسم آسانی سے نِڑھال ہو سکتا ہے۔ چاربار حاملہ ہونے کے بعد، خاصکر  اَگر  دو پیدائش کے درمیان دو سال سے بھی کم وقت کا فاصلہ ہے، تو اُس کو انیمیا (خون کی کمی) اَور ہیمریج جیسی صحت سے جُڑی سنگین دقتوں کے بڑھے ہوئے خطرات کا مقابلہ کرنا پڑ سکتا ہے۔

اَگر ماں چار یا اُس سے زیادہ بار حاملہ ہوئی ہے،تو اُس کے بچّے کی موت کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔

پیدائش کا وقتی تعین اہم پیغام 4

خاندانی منصوبہ بندی کی خدمات لوگوں کو یہ منصوبہ بنانے کا علم اَور اُس کے طریقے میسّر کراتی ہیں کہ بچّا پیدا کرنا کب شروع ہو،کِتنے بچّے پیدا کریں،اَور اُن کے درمیان کِتنی دوری رکھیں، اَور کب رُکیں۔ حمل کو ٹالنے کے کئی محفوظ اَور منظور طریقے دستیاب ہیں۔

صحتی مراکز کو خاندانی منصوبہ بندی کے اُن طریقوں کو چُننے میں لوگوں کی مدد کرنے کے لئے صلاح دینے کی پیشکش کرنی چاہئیے جو قابل قبول، محفوظ،آسان،کارگر اَور کم خرچیلے ہوں۔

مانع حمل کے مختلف طریقوں میں، صرف کنڈوم ہی حمل اَور ایچ آئی وی / ایڈس سَمیت جنسی تعلقات سے پیدا بیماریوں سے حفاظت کرتا ہے۔

بچّے کو صرف ماں کا دودھ پِلانا ماں کی کوکھ کے ہرے پن کی واپسی کو لگ بھگ چھے مہینے تَک کے لئے روک سکتا ہے۔ صرف ماں کا دودھ پِلانا حاملہ ہونے سے خاتون کا 98 پھیسدی حفاظت کرتا ہے۔ لیکِن صرف تبھی اَگر اُس کا بچّا چھے مہینے سے کم عمر کا ہے، ماں کی ماہواری دوبارہ شروع نہیں ہوئی ہے، اَور بچّے کی ضرورت پر اُس کو صرف ماں کا دودھ دیا جا رہا ہے کوئی بھی پھل یا مائع چیز نہ دی جا رہی ہے۔

پیدائش کا وقتی تعین اہم پیغام 5

خاندانی منصوبہ بندی مرد اَور خاتون دونوں کی ذمہ داری ہے، سبھی کو صحت سے جُڑے فواید کے بارے میں جاننے کی ضرورت ہے۔

مرد اَور خاتون دونوں کو غیر طۓ شدہ حمل  سے بچنے کی ذمہ داری لینی چاہئیے۔ اُن کے پاس معلومات اَور صحتی کارکن کی صلاح ہونی چاہئے،تاکہ خاندانی منصوبہ بندی کے میسّر مختلف ذرائع کے بارے میں وہ خبردار رہیں۔

معلومات ڈاکٹر، نرس، استاد، خاندانی منصوبہ بندی مرکز اَور جوان یا خاتون تنظیمات سے بھی حاصل کی جا سکتی ہے۔

ماخذ : یونیسیف

2.9
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top