شیئر

ہیضہ

اِس حصے میں متعدی بیماری ہیضہ کی معلومات دی گئی ہے ۔

تعارف


ہیضہ / ہیضہ شخص کے ذریعے آلودہ کھانا یا پانی پینے کی وجہ سے ہونے والا آنت سے متعلق متعدی بیماری ہے ۔ عام طور پر ، یہ وِبرِیو کولرا بیکٹیریا کی وجہ سے ہوتا ہے ۔ اِس کی حِضانت مہلت ایک سے پانچ دنوں کی ہوتی ہے ۔ نجاست کے بعد ، جرثومہ اِمعائی آرگنزم  پیدا کرتا ہے ، جِس کی وجہ سے کَثیر ، تکلیف دہ اَور پَتلے دست ہوتے ہے ۔ یہ جلدی سنگین پانی کی کمی کو پَیدا کرتا ہے ۔ اَگر مریض کو وقت پر ، فوراً علاج فراہم نہیں کیا جاتا ہے ، تو مریض کی موت بھی ہو سکتی ہے ۔

اس کے علاوہ  مریض زیادہ تر کو اُلٹی بھی ہوتی ہے ۔ عام طور پر ، ہیضہ کے بیکٹیریا کو پانی یا کھانے کے ذرائع میں دیکھا جاتا ہے ۔ اِس بیماری کا بیکٹیریا متاثر جراثیم زدہ شخص کے پاخانے کے ذریعے بھی داخل ہو سکتا ہے ۔ عام طور پر ، ہیضہ کو ناکافی پانی کی سہولت ، گندگی اَور ناکافی صفائی کے ساتھ کئی مقامات پر پایا جاتا ہے ۔ ہیضہ کا جرثومہ کھاری ندیوں اَور ساحلی پانی کے ماحول میں بھی پنپ سکتا ہے ۔

 

علامت

ہیضہ کا نقل حرکت اکثر ہَلکا یا علامت مبرا ہوتا ہے ، لیکِن کبھی کبھی ، یہ نقل حرکت سنگین ہو سکتا ہے ۔ جراثیم زدہ شخص میں ہیضہ کے سنگین علامت درج ذیل ہو سکتے ہے :

  • ضرورت سے زیادہ پانی والے اسہال ۔
  • اُلٹی ۔
  • پیروں میں اینٹھن ۔


آدمی کے جسم میں تیزی سے سیال مادوں کا نقصان ہوتا ہے ، جو کہ پانی کی کمی اَور صدمے کو پیدا کرتا ہے ۔ اَگر مریض کو فوراً علاج فراہم نہیں کیا جاتا ہے ، تو گھنٹے کے اندر مریض کی موت ہو سکتی ہے ۔

وجہ

ہیضہ دست / پیچش / ڈائریا والی بیماری ہے ، جو کہ وِبرِیو کولرا بیکٹیریا کی وجہ سے ہوتا ہے ۔ یہ نسل انسان کے لئے عام نہیں ہے ۔ انسان عمل انہضام کے نظام میں ، جرثومہ کی حاضری اُس کے اصل زندگی سائیکل کا فطری حصہ نہیں ہے ۔ ہیضہ کے بیکٹیریا شخص میں آلودہ کھانے  یا پانی پینے کے ذریعے جراثیم زدہ ہو سکتا ہے ۔ عام طور پر ، اِس مہاماری کی آلودگی کا اہم ذریعہ جراثیم زدہ شخص کا پاخانہ ہوتا ہے ۔ جب مکھیاں پاخانے پر بیٹھتی ہے ، تب مکھیوں کے پیروں کی گدّی میں بیکٹیریا چپک جاتے ہیں ۔ جب یہ مکھیاں کھانے کے مادوں پر بیٹھتی ہیں ، تب بیکٹیریا خوردنی اشیا میں پہُنچ جاتا ہے ۔ یہ بیکٹیریا آلودہ خوردنی اشیا کے ذریعے شخص میں داخل ہو جاتا ہے ۔ یہ بیماری سیوےج کی ناکافی سہولت اَور غیر مناسب پینے کے پانی کا انتظام والے علاقوں میں تیزی سے داخل ہوتا ہے ۔ یہ بیماری ایک شخص سے دُوسرے شخص میں سیدھے نہیں پھَیلتی ہے بلکہ جراثیم زدہ شخص کے رابطہ میں آنے سے بیمار ہونے کا کوئی خطرہ نہیں ہوتا ہے ۔

تشخیص مرض

تجربہ گاہ آزمائشوں میں ، پاخانہ گرےم اسٹےن ( گرےم نیگیٹِو راڈ ) کلچر ، ڈارک فیلڈ مائکرونسکپی یا پاخانہ پی سی آر شامل ہیں ۔ تشخیصی جائزے کی تصدیق سے پہلے ہی ، علاج شروع کرنا ضروری ہوتا ہے ۔ پاخانہ یا ریکٹل سواب کا نمونہ لیا جاتا ہے اَور اِس کو ہیضہ بیکٹیریا جائزے کے لئے تجربہ گاہ میں بھیجا جاتا ہے ۔

ہیضہ کاٹ

اِس کاٹ کے نیچے لگی بالٹی میں پاخانہ گِرتا ہے ۔ اِس کاٹ کا استعمال مریض کے ذریعے پاخانے کی مَتْرُوک مقدار اَور برباد ہوئی سیال کی مقدار کو پُورا کرنے کے لئے کیا جاتا ہے ۔

انتظام وانصرام

زیادہ سے زیادہ مقدار میں مائع اشیاء کا استعمال کریں : پانی کی کمی سے بچنے کے لئے زیادہ سے زیادہ مقدار میں مائع مادوں کا استعمال کرنا ضروری ہوتا ہے ۔ پانی کی کمی کو روکنے اورل رِہائڈریشن سالٹ ( او آر ایس ) کا استعمال کیا جاتا ہے ۔ معیاری گھریلو نسخے جیسے کہ نمکین چاول کا پانی ( نمکین گوندھ ) ، نمکین دہی مشروب ، سبزی اَور چکن کے سوپ کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے ۔ مریض کو گھریلو نسخے جیسے کہ دال کا پانی ، ہَرے ناریل کا پانی ،بے  نمک  سوپ ، ہَلکی چائے ( میٹھے کے بغیر ) اَور  بے میٹھا  تازہ پھلوں کا رس استعمال کے لئے دیا جا سکتا ہے ۔

دوائیں

اینٹی بایوٹِکس بیماری کی سنجیدگی اَور مہلت کو کم کر سکتا ہے ، لیکِن اِس دعویٰ کا استعمال ریہائڈریشن حاصل کرنے میں مدد نہیں ہوتا ہے ۔

خوردنی اشیا

ڈبلیو ایچ او کے ذریعے دست / پیچش / ڈائریا سے متاثر بچّے کو مسلسل کھِلائے جانے کی سفارش کی جاتی ہے ۔ عام آنت کے عمل کو دوبارہ حاصل کرنے کے لئے مسلسل کھِلانے سے مدد مِلتی ہے ۔ اِس کے برعکس ، اَگر لَمبی مہلت تَک دست / پیچش / ڈائریا سے متاثر بچّے کو خوردنی اشیا کا استعمال ممنوع ہوتا ہے ، تو اُن بچّوں میں آنت کا عام عمل کو دوبارہ حاصل کرنے کی رفتار دھیما ہو جاتی ہے ۔

روک تھام

  • ہیضہ کی روک تھام کے لئے سجھاؤ
  • صاف اَور محفوظ پینے پیئں ۔
  • اکثر اپنے ہاتھ صابن اَور صاف پانی سے دھوئیں ۔
  • کافی صفائی اَور صاف صفائی کو بنائے رکھیں ۔
  • خوردنی اشیا کو معقول طریقے اَور پوری طرح سے ڈھک کر پکائیں ۔

ان دنوں دو اورل ہیضہ ویکسین میسّر ہیں ۔ ڈیوکورل ( ایس بی ایل ویکسین کے ذریعے تیار کیا گیا ) ، جو کہ عالمی صحتی تنظیم کے ذریعے ثابِق قابلیت اَور ساٹھ سے زیادہ ملک میں لائسنس حاصل ہے اَور شےن کول ( ہندوستان میں شانتا بایوٹیک کے ذریعے تعمیر شدہ ) ، جو کہ ہندوستان میں لائسنس حاصل اَور ڈبلیو ایچ او سے قابلیت حاصل کرنے کے لئے زیر التوا ہے ، کیونکہ ویکسین کی دو خوراک ہے ، ویکسین لینے والے افراد کو حفاظت حصولیابی میں کئی ہفتوں کا وقت لگ سکتا ہے ، اس لئے ، ٹیکہ کاری کو ہیضہ کی روک تھام اَور قابو کے معیار اقدامات  کے ساتھ بدلا نہیں جانا چاہئے ۔


ماخذ : قَومی صحت داخلہ باب ، حکومتِ حند ۔

2.25
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Related Languages
Back to top