شیئر

ڈنگو بخار

اس حصے میں ڈنگو بخار کی علامات وجہ کے ساتھ تشخیص مرض اور روک تھام کی معلومات دی گئی ہے۔

تعارف

ڈنگو بخار ایک بہت متعدی بیماری ہے ۔ اِس کو ہڈی توڑ بیماری کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ۔ یہ مچھروں کے کاٹنے کی وجہ سے ہوتا ہے ۔ یہ مُنطقَہ حارہ اَور ذیلی مُنطقَہ حارہ علاقوں میں اُس کے پنپنے کی موافقت سے بڑی تیزی سے پھَیلتا ہے ۔ کچھ ڈنگو معاملوں میں یہ بیماری زندگی درآوَر جریان خون بخار میں بدل جاتا ہے جِس کے

  • نتیجتاً جریان خون
  • بلڈ پلیٹلیٹس میں درج ذیل سطح اَور خون پلازما میں بہاؤ

ڈنگو بخار مچھروں کی کئی نسلوں جِس میں جینس ایڈیز ، منادی شے   اے ایجِپٹی کے ذریعے پھَیلتا ہے ۔ ہَلکے یا درمیانی ڈنگو کے علاج میں رِہائڈریشن کے لئے زبانی یا نبضوں میں سیدھے مائع مادہ دیا جاتا ہے ۔ سنگین ڈنگو کے ہونے پر نبضوں میں مائع مادہ کے ساتھ خون  اِنتقالِ رطُوبَت بھی ہوتا ہے ۔

علامات

ڈنگو کی علامت عام طورپر  تین سے چَودہ دنوں کے اندر تیار ہوتے ہیں ۔ اس کے بعد ڈنگو کا وائرس اِنکیوبیشن کی مدت میں ( ڈنگو کا مچھر کاٹنے کے بعد سے ڈنگو کی علامات تیار ہونے تَک کی مہلت کو اِنکیوبیشن مہلت کہتے ہیں ) بے نقاب ہوتا ہے ۔ معمولاً یہ مہلت چار سے سات دن کی ہو سکتی ہے ۔


ڈنگو کی علامات درج ذیل ہیں :-

  • اچانک تیز بخار
  • سردرد ( عام طورپر آنکھوں میں درد ہوتا ہے )
  • پٹھوں اَور جوڑوں میں بھیانک درد
  • چکتّے  نِکلنا
  • ٹھنڈ لگنا ( کانپنا )
  • جلد پر لال چکتّے بننا
  • منہ پر خاموشی آنا
  • بھوک نہ گنا
  • گَلے میں خراش
  • غیر معمولی طور پر کان ، مسوڑوں اَور پیشاب وغیرہ سے خون بہنا

وجہ

ڈنگو جراثیم زدہ مچھر سے پھَیلتا ہے ، جِس کو ایڈیز ایجِپٹی  مادہ مچھر کہتے ہیں ۔ عام طورپر یہ مچھر دن میں اور کبھی کبھی رات میں کاٹتا ہے ۔ ڈنگو کا وائرس آر این اے  فلےوِویرِد پریوار سے ہے ۔ اِس بیماری کے وائرس چار قسم کے ہوتے ہیں ، جِن کو سِروٹائپ کہا جاتا ہے ۔ یہ درج ذیل ہے : ڈین 1 ، ڈین 2 ، ڈین 3 اَور ڈین 4۔ ڈنگو وائرس کا پھیلاؤ ایک دائرے کے تحت ہوتا ہے ۔ جب مادہ مچھر کے ذریعے جراثیم زدہ آدمی کو کاٹا جاتا ہے ۔ اس کے بعد جب یہی مچھر کِسی صحت مند آدمی کو کاٹتا ہے تب یہ وائرس انسان میں چلا جاتا ہے اَور اس طرح یہ سائیکل مسلسل چلتا رہتا ہے ۔

بیماری تشخیص مرض


انتہائی تیز بخار ( چالیس ڈگری سیلسئس سے زیادہ ) ہونے پر ممکنہ بیماری کی پہچان درج ذیلدو کی بنیاد پر کی جاتی ہے :-

  • سنگین سردرد
  • آنکھوں میں درد آخر آنکھوں کو ہِلانے اَور ڈُلانے میں بھی تکلیف کا ہونا
  • پٹھوں اَور جوڑوں میں درد
  • ابکائی یا اُلٹی ہونا

مائکرو ٹیسٹ

جلدازجلد تجربہ گاہ میں سفید خون خلیوں کی تعداد کے کم ہوتے سطح کی جانچ کی جاتی ہے تاکہ اِس کے ذریعے کم پلےٹ لےٹس اَور میٹابالِک ایسِڈوسِس کو دیکھا سکے ۔ عام طور پر لیور سے امینو ٹرانسفریز کا عام اعلیٰ سطح ( اے ایس ایس ٹی اَور  اے ایل ٹی) کم پلےٹ لےٹس اَور سفید خون خلیوں کے ساتھ جُڑا ہوا ہے ۔

ریپِڈ ڈایگنوسٹِک ٹیسٹ

ریپِڈ ڈایگنوسٹِک ٹیسٹ خصوصی طور پر اینٹی ڈنگو آئی جی جی اَور آئی جی ایم اینٹی باڈی کی جانچ کرنے میں ایک بہترین طریقہ کار فراہم کرتا ہے ۔ آئی جی جی اینٹی باڈی کے ہائی ٹائٹر کی موجودگی ، آئی جی ایم اینٹی باڈی کے نمونے کا پتہ لگانے میں رکاوٹ پَیدا  نہیں کرتی ہے ۔ اِس کا جائزہ انتہائی خالص ڈنگو پروٹین مرکب کے استعمال کے ذریعے ڈنگو کے تمام چاروں طرح کے سِروٹائپ کا پتہ لگایا جا سکتا ہے ۔

انتظام

مَوجُودَہ وقت میں ، ڈنگو کا علاج علامات کے مُطابق ایسپرین وغیرہ دوائیاں لینے سے خون کا بہنا بڑھ جاتا ہے ۔ اِن کے استعمال سے بچنا چاہئے اِن کے مقام پر پےراسِٹامول جیسی دوائیاں درد میں مدد کرتی ہے ۔ بستر پر مناسب آرام اَور مائع مادہ کا وسیع استعمال کریں ۔ اَگر تین سے پانچ دنوں کے بعد بھی حالت میں اصلاح نہیں ہوتا ہے تو معالج سے صلاح لیں ۔

پیچیدگی

امکانی طور پر ایک آدمی سنگین ڈنگو سے متاثر ہے اُس کو بہت سنگین ڈنگو کے طور پر جانا جاتا ہے ۔ اِس کا سبب ابھی ظاہر نہیں ہے لیکِن اِس کے خطرہ کا اہم وجہ پہلے سے جراثیم زدہ ہونا ہوگا ۔ اکثر : عام طور پر ایسا نہیں ہوتا ہے ۔ بہت سنگین ڈنگو کی  علامات سے متاثر شخص کو فوراً ڈاکٹر سے رابطہ کرنا چاہئے ۔ بہت سنگین ڈنگو سے متاثر افراد کے ساتھ ایک دیگر مسئلہ یہ ہے کہ وہ اچانک کم بلند فشار خون کا تجربہ کر سکتے ہیں ۔ اِس کو ڈنگو ٹراؤما سنڈروم کے طور پر جانا جاتا ہے ۔ ڈنگو ٹراؤما سنڈروم کی علامات میں درج ذیل شامل ہیں

  • ٹھنڈی اَور چِپچِپِی جلد
  • کمزور نبض چلنا
  • سُکھا گَلا
  • پیشاب میں کمی
  • سانس کا تیز چلنا

روک تھام


ڈنگو سے بچنے کے لئے ابھی تک کوئی ویکسین بازار میں میسّر نہیں ہے ۔ اِس کی روک تھام کا سَب سے آسان اقدام یہ ہے کہ مچھروں کے کاٹنے سے بچا جائیں۔

  • دن میں مچھر کے کاٹنے سے بچنے والے مصنوعات کا استعمال کریں
  • مچھردانی لگاکر سوئیں
  • باہر جاتے وقت پُوری بازو اَور لَمبی پتلون وغیرہ کپڑوں کا استعمال کریں ۔ جسم کو مچھر کے کاٹنے سے بچنے کے لئے جراثیم کش مصنوعات ( ڈی اِی اِی ٹی پر مشتمل ) کا استعمال کریں ۔ بالخصوص : جب آپ ڈنگو متاثر علاقوں کا دورہ کریں تو جسم کے زیادہ تر حصوں کو ڈھک‌کر رکھیں۔
  • مچھروں کی تولیدی صلاحیت  کو کم کرنے کے لئے پانی کے برتن کو ٹھیک طرح سے ہمیشہ کَوَر کرکے رکھیں


ماخذ : قَومی صحت داخلہ باب ،  وزارت صحت اور خاندانی بہبود  ، حکومتِ حند ۔

2.8
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top