شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

ٹِٹنیس

اِس حصے میں ٹِٹنیس سے منسلک معلومات دی گئی ہے ۔

تعارف

ٹیٹنس کو  پنجروں ریشوں (فائبر ) کے لَمبے وقت تَک کھِنچے ( سکڑنا ) رہ جانے والی حالت سے پہچانا جاتا ہے ۔ انفیکشن کی ابتدائی علامات کا سبب ٹیٹانوسپیسمِن ہے ۔ ٹیٹانوسپیسمِن ایک نیوروٹاکسِن ہیں ، اِس کو کلوسٹریڈِیم ٹےٹانی پیدا کرتا ہے ، جو کہ بغیر ہوا کے زندہ رہنے والا بیکٹیریا ، گرام پوزیٹیو ، چھڑ کے شکل کا ہوتا ہے ۔ عام طورپر : انفیکشن  سارے جسم میں پٹھوں کی دردناک اکڑن کی وجہ  ہے ۔ یہ جبڑوں کی جکڑن کو پیدا کرتا ہے ، جِس سے منھ کھولنے یا چبانے میں پریشانی ہوتی ہے ۔ اَگر ایسا ہوتا ہے ، تو شخص گھٹن کی وجہ سے مر سکتا ہیں ۔ یہ عام طور پر تب ہوتا ہے ، جب تازہ زخم آلودہ ہو جاتا ہے ۔ اَگر ٹِٹنیس کا علاج نہیں کیا جاتا ہیں ، تو یہ پیچیدگیوں کو پیدا کر سکتا ہے ، جو کہ تشدد آمیز ہو سکتی ہے ۔

علامات

جبڑوں میں جکڑن ( جبڑا بند ہونا ) ۔ پٹھوں میں اینٹھن اَور جکڑن ، جو کہ 24 سے 72 گھنٹوں سے زیادہ وقت تَک گردن سے جبڑوں اَور اعضأ میں پھَیل سکتی ہے دیگر علامات میں شامل ہیں :

  • 38C (100.4F) یا اِس سے زیادہ اعلیٰ درجہ حرارت (بخار)
  • پسینا ۔
  • دل کی دھڑکن تیز چلنا ۔
  • بُلند فشار خون( ہائپرٹینشن ) ۔

وجہ

ٹیٹنس کلوسٹریڈِیم ٹیٹانی بیکٹیریا کی وجہ سے ہوتا ہے ۔ کلوسٹریڈِیم ٹےٹانی کے تُخمَک جسم کے باہر رہ سکتے ہیں اَور ماحول میں دور دور تک پھَیل سکتے ہیں ۔ یہ عام طورپر  جانوروں کے گوبر جیسے کہ گھوڑے اَور گائے اَور آلودہ مٹی میں پائے جاتے ہے ۔ اِن کے جسم میں داخلہ کرنے کے بعد ٹِٹنےس بیکٹیریا جلدی سے دو گُنے ہو جاتے ہے اَور ٹےٹانوسپیسمِن پیدا کرتے ہیں ۔ اس طرح کے زہر کو نیوروٹاکسِن کے نام سے جانا جاتا ہے ۔ اَگر ٹےٹانوسپیسمِن خون میں داخلہ کرتا ہیں ، تو یہ جسم کے چاروں طرف پھَیل جاتا ہے ، جِس کی وجہ سے ٹِٹنیس کی علامت تیار ہوتی ہے ۔ نیوروٹوکسِن دماغ سے ریڑھ کی ہڈی کو بھیجے جانے والے عصبی سِگنل کو بلاک کرتا ہے اَور اُس کے بعد پٹھوں کو بلاک کرتا ہے ۔ یہ ٹِٹنیس سے منسلک پٹھوں میں اینٹھن اَور پٹھوں کی جکڑن کا سبب بنتا ہے ۔

تشخیص مرض

عام طورپر : ٹِٹنیس کی معلومات علامات کے ذریعے جانی جا سکتی ہے ، لیکِن علامتی معلومات جاننے کے لئے اسپَیچُل ٹیسٹ کیا جاتا ہے ، جِس سے بیماری کی تصدیق ہوتی ہے ۔ اسپَیچُل ٹیسٹ : اِس ٹیسٹ میں اسپَیچُل کو گَلے کے اندر پیچھےکی طرف ڈالنا شامل ہے ۔ اَگر کوئی انفیکشن نہیں ہے ، اسپےچوال سے  حلقوم اِضطراری عمل ( گَیگ رِفلیکس ) ہوگی اَور مریض اسپَیچُل کو منھ سے باہر نِکلنے کی کوشش کرے‌گا ۔ ہالانکہ ، اَگر ٹِٹنیس کا انفیکشن موجود ہے ، تو اسپَیچُل کی وجہ سے گَلے کے پُٹھوں میں جکڑن ہوگی اَور گَلے کے پٹھوں اسپَچُلا سپےچُلا کو پکڑ لے‌گی ۔

انتظام

ٹِٹنیس کے لئے دو قسم کا علاج ہیں : احتیاطی علاج جِن لوگوں کو ٹِٹنیس کے خلاف کامِل یا کم ٹیکہ لگایا گیا ہے اَور اِن لوگوں کو چوٹ لگتی ہے ، تو اُن کو ٹیٹنس کے انفیکشن کا خطرہ کم ہوتا ہے ۔ علامتی علاج جِن لوگوں میں فعال ٹِٹنیس انفیکشن کی علامات تیار ہیں ، اُن میں ٹِٹنیس کی علامات کے علاج کے لئے تین خاص قسم کی دواؤں کا استعمال کیا جاتا ہے ۔
درد دور کرنے والی دوائیں ۔
پٹھہ مضبوتی ۔
نیورومُسکُلر بلاکِنگ ایجنٹس ۔

روک تھام

ٹیٹنس کو ٹِٹنیس ٹوکسائڈ کے ساتھ ٹیکے کے ذریعے روکا جا سکتا ہے ۔ ٹِٹنےس کو روکنے کے لئے چار طرح کے DTaP ، Tdap ، DT ، and Td ٹیکوں کے مجموعہ کا استعمال کیا جاتا ہے ۔ اِن میں سے دو ٹیکےلگائیں ( DTaP and DT ) 7 سال کی حالت سے بَڑے بچّوں کو دئے جاتے ہیں اَور دو ٹیکے لگائیں ( Tdap and Td ) بَڑے بچّوں اَور بالغوں کو دئے جاتے ہیں ۔ سی ڈی سی سفارش کرتا ہے کہ بالغوں کو ہر دس سال میں بوسٹر ٹیکہ دیا جانا چاہئے ۔


ماخد : قَومی صحت داخلہ باب ، حکومتِ حند ۔

1.71428571429
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Related Languages
Back to top