ہوم / صحت / بچے کی صحت / صبح جلد اٹھ جانے کے فوائد
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

صبح جلد اٹھ جانے کے فوائد

آجکل بچے کافی دباو میں ہیں ، یہ اپنی روز مرہ کی سرگرمیوں میں جب سے وہ اسکول جانے لگے ہیں دباو کا سامنا کرتے ہیں، صبح دیر سے اٹھنے سے شروع ہوتی ہے پھر اسکول کے لیے جلد تیار ہونے کی گڑبڑ کئی مرتبہ اپنی صبح کی ذمہ داریوں سے فرار بشمول صبح کا ناشتہ یہ آج کل کا عام معمول ہے لیکن یہ ایک نازک توجہ طلب مسئلہ ہے جو بچے کی جسمانی اور دماغی صحت پر اثر انداز ہوتا ہے۔ اس پرصبح جلد اٹھ کر قابو پایا جاسکتا ہے۔ یہ عام بات لگتی ہے لیکن اسکابچے کی روزآنہ کی سرگرمیوں پر کافی اثر ہوتا ہے۔ .

نیند سے بیداری کا مناسب ترین وقت

علیٰ الصبح 4 بجے نیند سے بیداری کا صحیح وقت ہے ۔ بچے کی 5سے 5:30 کے درمیان اٹھ جانے کیلے ہمت افزائی کی جانی چاہیئے کم از کم اسکول بس کے اوقات سے 2تا 3 گھنٹہ قبل۔.

صبح اٹھنے کے فوائد

صبح جلد بیدار ہوجانے کے متعدد فوائد ہیں، کچھ کا ذیل میں تذکرہ کیا جارہا ہے۔

  1. وہ ورزش یا ہلکا وارم اپ کرسکتے ہیں جو انہیں دن بھر تروتازہ رکھتا ہے۔. -یہ ایک غلط فہمی ہے کہ 40 سال سے اوپر کی عمر والوں کیلے ورزش ضروری ہے ۔ بچوں کو بھی جسمانی ورزش کی ضرورت ہے انہیں بھی اپنے جسم کو موڑنے اور تناو پیدا کرنے کی ضرورت ہے تاکہ وہ لچکدار بنارہے زیادہ تر اسکول جسمانی ورزش یا کھیل کود پر توجہ نہیں دیتے۔ حالانکہ یہ اہم ترین چیز ہے کہ صبح انہیں وارم اپ پر متوجہ کیا جائے۔
  2. Tانہیں اپنے جسم کے کام انجام کیلئے فاضل وقت میسرآتاہے۔ -بچوں کو اسکول جانے سے قبل صبح کی ذمہ داریوں کو انجام دینے کی تربیت دی جانی چاہیئے۔
  3. وہ دن کے کام کی منصوبہ بندی کرسکتے ہیں۔. - صبح اٹھنے کی صورت میں بچوں کو کافی موزوں وقت انکی اپنی دن بھر کی مصروفیات کی منصوبہ بندی کے لیے مل سکتا ہے۔ اس سے وہ نظم ونسق کے پابند ہوتے ہیں۔
  4. وہ اسکول کے لیے تیار ہونے کیلے اپنی مدد آپ کرسکتے ہیں۔ بچوں کو بغیر کسی چیز کو بھولتے ہوئے اپنے اسکول بیگ کی تیاری کپڑے تبدیل کرنے اور اپنی چیزوں کو سلیقہ سے رکھنے کے لیے وقت ملتا ہے۔ ضرورت پڑنے پر وہ اپنی پانی کی بوتلیں بھرکر ناشتہ باندھ کر اپنے والدین کی مدد بھی کرسکتے ہیں اس سے ان میں ذمہ داری کا جذبہ پیدا ہوتا ہے۔.
  5. انہیں بہترین اور بھرپور ناشتہ کا وقت مل سکتا ہے۔ کئی بچوں کو دودھ کا ایک گلاس پی کر اسکول جانے کی عادت ہوتی ہے۔ ناشتہ بھر پور ہونا چاہیئے جو اناج، دالوں اور میوے اور پھل پر مشتمل ہوناچاہیئے اس سے انہیں دن پر چاق وچوبند رہنے کے لیے ضروری توانائی ملتی ہے۔
  6. اس سے دباو سے نجات ملتی ہے۔. اس طرح انہیں اپنے تمام کام بروقت مکمل کرنے کیلے کافی وقت ملتا ہے۔ اس سے وہ بغیر ٹینشن کے کُول رہتے ہیں وہ سوچنے کے لیے آزاد ہوتے ہیں اور اپنے کام مہارت کے ساتھ انجام دیتے ہیں۔.

بچوں کو ابتدائی عمر ہی سے صبح جلد اٹھنے کا عادی بنانا چاہیئے یہ بھی ضروری ہے کہ وہیں متناسب نیند بھی ملے اس لیے انہیں رات کے ابتدائی اوقات ہی میں جلد بستر پر چلے جانا چاہیے ۔ والدین انکے TV یا کمپیوٹر یا موبائیل 8 بجے تک بند کرنے کیلے انکی مددکریں۔ تاکہ وہ جلد بستر پر جاسکیں۔ انہیں کہانیاں سناکر نیند کیلے تیار کریں اور 9 بجے تک انہیں نیند کے آغوش میں پہنچادیں اس سے بچے کے برتاو میں یقینی طورپر کافی فرق پیدا ہوگا۔ ان میں بروقت اور اچھی طریقہ سے کام کرنے کا اعتماد پیدا ہوگا۔

ذرائع/مآخذ ایم ایس دیویکا۔ گھریلو خاتون حیدرآباد

3.25
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top