ہوم / صحت / ابتدائی طبی امداد / حسد اَور زخم
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

حسد اَور زخم

حسد اَور زخم، داغ، خرابی اَور دماغی  زخم جیسے اثر چھوڑ سکتے ہیں۔ اِس کے اثر طویل مدتی اور کبھی کبھار مستقل بھی ہو سکتے ہیں۔ اس لئے صحیح احتیاط اَور علاج، گَہرے جلے ہوئے کے لئے ضروری ہے۔

جب جل جائے


    جسم تب جلتا ہے جب جسم تیز کیمیا  اَور آگ کے سِیدھے رابطہ میں آتا ہے یا پھِر بہت ہی قریب جاتا ہے۔ اکثر  اِس وجہ سے لوگ جل جاتے ہیں :
  • باورچی خانہ کے برتن جیسے سینکنے والا برتن، اووین شےلو اَور پین کے ہےنڈل،
  • کیتلی، ہسپتال اَور پریس سَمیت جدید برقی آلات،
  • کھُلے چولہے، گیس اَور بِجلی کی آگ سے نِکلنے والے حادثاتی طورپر آگ،
  • کپڑوں اَور دیگر چیزوں میں حادثاتی طورپر آگ لگنا،
  • بلیچ اَور مرتکز کیمیا،
  • سورج کی تیز روشنی اَور ہوا،
  • رسی کے ساتھ حادثہ۔

  • زیادہ تر آگ کی واردات گھروں میں ہوتی ہیں اَور گھروں میں بھی زیادہ تر حادثات باورچی خانہ میں ہوتی ہیں۔ باورچی خانہ گھر ممکنہ طور بہترین جگہ ہوتی ہے جہاں زخمِیوں کا علاج کیا جا سکتا ہے۔ لیکِن، یہاں پر ہم ایک بار پھر حادثہ کو دور رکھنے کے لئے ضروری قدم اُٹھانے پر زور دیتے ہیں۔ زیادہ تر لوگوں کے لئے اُن کی کبھی ضرورت ہی نہیں پڑتی۔ یہاں یہ دھیان رکھنا ضروری ہے کہ اِس سے زیادہ تر بوُڑھے، جسمانی طور پر معذور اَور بچّے، خاص کر چھوٹے بچّے متاثر ہوتے ہیں۔ بچّوں میں تمام جلنے کی واردات کو بَڑوں کو سنجیدگی سے لینی چاہئے۔

کچھ اہم باتیں


    کچھ اہم باتیں، جِن سے بچیں جِن سے بچنا ضروری ہے-
    جسم کے جل جانے پر کیا ہوتا ہے، ڈاکٹر کی مدد سے پہلے کیا کیا جانا چاہئے، اِس کو بتانے سے پہلے یہاں کچھ باتیں ہیں جِن کو واردات کے وقت نہیں کرنا چاہئے-
  • بٹر، آٹا یا بےکِنگ سوڈا آگ پر کبھی نہیں ڈالنا چاہئے،
  • کریم، مرہم یا تیل کو علاج کے طور پر کبھی استعمال نہیں کیا جانا چاہئے،
  • کبھی بھی کوئی بھی زخم کو کھودنا یا چھیلنا نہیں چاہئے،
  • جب تک بہت ضروری نہ ہو، تب تک کسی بھی زخم کو نہ چھیڑیں اَور نہ ہی اُس کو ہینڈل کرنے کی کوشش کریں،
  • کبھی بھی جسم پر جَلے کپڑوں کو نِکالنے کی کوشش نہ کریں۔

  • آج کل زیادہ تر کپڑے سِنتھےٹِک ریشے سے بنے ہوتے ہیں جو ٹافی کی طرح پِگھلتے ہیں اَور جلد پر چپک جاتے ہیں۔ اَگر آپ اُن کو ہٹانے کی کوشش کریں‌گے، تو آپ جلد کو ہی غیر ضروری درد پہُنچائیں‌گے اَور انفیکشن کو مدعو کریں‌گے۔ جلے ہوئے کپڑوں کو جراثیم مبرّا کرنا ہوگا اَور اُس کو اَکیلے چھوڑ دینا اَچھا ہوگا۔

عام علاج


کچھ خاص قسم کی حسد کو چھوڑ‌کر دیگر سبھی کے لِئے عام علاج ہے۔ جو شخص جلتا ہے اُس کے لِئے وہ خطرناک، دردناک اَور صدمہ دینے والا ہو سکتا ہے۔ اکثر یہ حسد گھر میں آگ لگنے یا سڑک حادثہ میں لگی آگ سے پیدا ہوتی ہیں۔ مدد کا اہم اصول ہوتا ہے کہ آپ کو پرسکون  رہ‌کر، متاثر شخص جو صدمے میں اَور ڈرا ہوا ہے اُس کی حوصلہ افزائی کرتے رہنا چاہئے۔ اُس کے ساتھ ہم آہنگ برتاؤ کریں اَور جلدازجلد اُس کو مناسب مدد میسّر کرانے کی کوشش کریں۔
جب ایک بار جلد اَور ریشے جل جاتے ہیں تو مادے کی شدید کمی ہو سکتی ہے۔ متاثر خلیہ گرمی کو اپنے اندر سنجو لیتی ہیں اَور بعد میں زیادہ نقصان پہُنچاتی ہیں۔ اس لئے ابتدائی علاج کا مقصد گرماہٹ سے چھٹکارا پانا ہوتا ہے۔ ابتدائی علاج میں متاثر ریشوں کے درجۂ حرارت کو گھٹانا چاہئے۔

احتیاط

  • زخمی حصے پر ٹھَنڈا پانی ڈالیں۔ یہ بالٹی یا کٹورا یا باورچی خانہ کی سِنک کا استعمال کر یا عام نَل کے نیچے جلے ہوئے مقام کو رکھ‌کر کیا جا سکتا ہے۔
  • جلے ہوئے حصے کو کم از کم پندرہ منٹ تَک ٹھَنڈے پانی میں رکھنا چاہئے یا تب تک جب تک کہ درد ہونا بند نہ ہو جائے۔ اَگر زخمی حصے (مثال کے لئے چہرہ) کو پانی کے نیچے لانا مشکل ہو، تو صاف چائے کے کپڑے یا ملائم کپڑے کو ٹھَنڈے پانی میں بھِگوئیں اَور زخمی حصے پر اِس کو رکھیں، لیکِن اِس کو رگڑیں نہیں۔ دوبارہ اِس کو دوہرائیں (ٹھَنڈے پانی میں پھر سے بھِگوکر)، لیکِن جَلے کو رگڑے نہیں۔ یہ بافت کی گرمی کو باہر کرنے میں مددگار ثابت ہوگا اَور ایسا کرنے سے آگے اَور نقصان نہیں ہوگا اَور یہ درد کو کم کردےگا۔
  • انگوٹھی، ہار، جوتے اور تیز فِٹِنگ والے کپڑوں کو جلد از جلد ہٹا دیں کیونکہ بعد میں سوجن بڑھنے کی وجہ سے اُن کو نِکالنا مشکل ہو سکتا ہے۔
  • جب درد بند ہو جائے تو جلے ہوئے حصے کو احتیاط سے کپڑے سے کَوَر کریں۔ بَڑا حصہ یا گَہرے جَلے کو جب پانی سے صاف کر دیا جائے تو اُس کو صاف ہَلکے کپڑے، حال ہی میں لانڈری سے صاف کئے گئے ملائم کپڑے سے ہی ڈھکیں۔ (ایک تکئے کا کَوَر ایک مثالی کپڑا ہے)۔
  • ایک ڈاکٹر کو بُلائیں یا ایمبولینس کے لئے کال کریں۔
  • ایک پوسٹےج اسٹامپ (2 * 21 / 2) شکل سے زیادہ حصہ جلنے پر اُس کو ڈاکٹر کو ضرور دِکھائیں۔
  • جب بَڑا حصہ متاثر ہوا ہو اَور ہسپتال میں علاج کی ضرورت ہو، تو ایک تَولئے میں برف لپیٹ‌کر سفر کے دوران جلے ہوئے حصے پر اُس کو لگایا جا سکتا ہے۔
  • انفیکشن  روکنے کے لئے جلے ہوئے بافت کو ڈھکنا ضروری ہے۔ یہ متاثر کی فکر کو بھی کم کرتی ہے جو جلے ہوئے حصے کو نہیں دیکھ سکتا ہو۔ ٹیبل کے کپڑے یا چادر جو نایلان سے نہ بنی ہو، جسم کو کَوَر کرنے کے لئے اَچّھی ہوتی ہیں۔ جسم کو ہلکے سے ڈھکنا چاہئے۔
  • ڈاکٹر یا ایمبولینس کا انتظار کرتے ہوئے متاثر کو مطمئن کریں اَور اُس کو راحت پہُنچائیں۔ بچّے کو پکڑ‌کر اُس کو گَلے لگائیں : یہ سَب سے اہم ہے، لیکِن اِس بات کا دھیان رکھیں کہ اُس کو کوئی نقصان نہ پہُنچے۔

خصوصی علاج والے  ماحول

کپڑوں میں آگ

  • اَگر اب تک کپڑے جل رہے ہوں، تو اُس پر پانی ڈال‌کر یا ایک کمبل، کوٹ یا کوئی دیگر بَڑے کپڑے یہاں تَک کہ قالین میں متاثر کو لپیٹ‌کر ہوا کی فراہمی کر اُس کو بُجھائیں۔ یاد رکھیں کہ خود کو آگ سے بچاتے ہوئے کمبل کو اپنے سامنے رکھتے ہوئے پکڑیں۔
  • جِس شخص کو آگ لگی ہوئی ہو، وہ بہت ڈرا ہوا ہوگا اَور ایک کمرے سے دُوسرے کمرے تَک دَوڑ سکتا ہے۔ آگ پھَیلا سکتا ہے یا تازہ ہوا میں بھاگ سکتا ہے، جہاں آگ اور تیز رفتار سے پھَیلے‌گی۔ اس لئے متاثر کو ایک جگہ رہنے کے لئے حوصلہ افزائی کریں۔
  • جب ایک بار آگ بُجھ جائے، تو جَلے کے لئے اوپر دئے گئے عام علاج کو شروع کریں۔

آنکھوں میں کیمیا کا جانا


یہ مقامی نقصان یا نظر کھونے کا سبب بن سکتا ہے اَور اس لئے علاج شروع کرنے میں یہاں تیز رفتار کی ضرورت ہوتی ہے۔ کیمیا کو تیزی سے مرتکز کر لینا چاہئے۔

  • متاثر کو پیٹھ کے بل لِٹائیں اَور پلکوں کو اپنے انگوٹھے اَور بَڑی اُنگلی سے پکڑیں۔ ناک کے اوپر کی طرف ایک دم سامنے سے ٹھَنڈا پانی لگاتار ڈالیں (دُوسری آنکھ کو کیمیا سے متاثر ہونے سے روکنے کے لئے)۔
  • کئی بار پلکوں کو بند کرنے اَور کھولنے کے لئے کہیں دیکھیں یہ مقررہ ہو جائے کہ کیمیا کا کچھ عضو پلکوں کے اندر پھنسا تو نہیں ہے۔,/li>
  • دھونے کے عمل کو کم از کم دس منٹ تَک جاری رکھیں۔ اِسے  موقع دیکھ‌کر کریں اَور وقت سے پہلے اِس کو کرنا بند نہ کریں۔
  • علاج کے بعد پلکوں کو بند کریں، آنکھوں پر ایک پےڈ رکھیں اَور آرام متعین کریں۔
  • متاثر کو راحت پہُنچاکر ایمبولینس بُلائیں اَور اُس کو ہسپتال لے جائیں۔

بِجلی سے ہونے والے  نقصان


اکثر یہ چھوٹے علاقوں میں ہوتے ہیں، لیکِن یہ کبھی کبھار گَہرے بھی ہو سکتے ہیں۔ یہ عام طور  پر ایسے  پوائنٹ پر پائے جاتے ہیں جہاں جسم کے اندر کرنٹ داخل ہو  جاتا ہے۔

    جہاں سے کرنٹ آ رہا ہو اُس کو بند کریں اَور متاثر کے پاس جانے سے پہلے پلگ کو ہٹائیں۔ اَگر متاثر پانی میں ہو، تو خود کو دور رکھیں پانی بِجلی کا موصل ہے۔ اِسی وجہ سے متاثر کو ہاتھوں کے نیچے سے نہ پکڑیں۔ متاثر کی سانس کی جانچ کریں۔ کرنٹ سینہ کے ذریعے اندر جا سکتا ہے اَور دل کو روک‌کر سانس لینا بند ہو سکتا ہے۔ اَگر ایسا ہوتا ہے تو منھ سے سانس دینا فوراً شروع کریں اَور دل پر بار بار دَباؤ دیں۔ جَلے کا عام علاج جاری رکھیں۔

ماخذ :پورٹل موضوع مواد ٹیم

3.66666666667
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Related Languages
Back to top