ہوم / دیہی توانائی / پالیسی سپورٹ / دین دیال اُپادھیائے گرام جیوتی یوجنا
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

دین دیال اُپادھیائے گرام جیوتی یوجنا

اِس حصے میں مرکزی حکومت کے ذریعے شروع کی گئی دین دیال اُپادھیائے گرام جیوتی یوجنا کے بارے میں زیادہ معلومات دی گئی ہے۔

کردار

اِس اسکیم کے تحت دیہی علاقوں میں کاشت کاری اَور غیر۔کاشت کاری صارفین کو محتاط طریقے سے بجلی فراہمی متعین کرنا اور قابل رسائی بنانے کے لئے کاشت کاری اَور غیر۔کاشت کاری فیڈر سہولیات کو الگ۔الگ کیا جائے‌گا۔اس کے ساتھ ہی دیہی علاقوں میں تقسیم اَورذیلی۔تَرسیلی نظام کو مضبوت کیا جائے‌گا جِس میں تقسیمی ٹرانسفارمر،فیڈر اَور صارفین کے لئے میٹر لگانا شامل ہوگا۔

اسکیم کے عنصر

اسکیم کا اہم حصہ الگ۔ الگ فیڈر کا انتظام کر ذیلی۔ترسیل اَور تقسیمی نیٹ ورک کو مضبوت بنانا ہے اَور تمام سطحوں جیسے اِنپُٹ پوائنٹ،فیڈر اَور تقسیمی ٹرانسفارمر پر میٹر لگانا ہے۔راجیو گاندھی وِدیوتیکرن یوجنا کے تحت پہلے ہی ' مائکرو  اَور  آف گرِڈ تقسیمی نیٹ ورک اَور دیہی برق کاری ' کا کام کیا جا چُکا ہے۔

بجٹی اہتمام

اِس اسکیم کے لئے کُل 43 ہزار 33 کروڑ کی سرمایہ کاری کی ضرورت ہے۔جِس میں سے حکومتِ حند (اسکیم کی پُوری مدت میں)33 ہزار 4 سَو 53 کروڑ کی مدد دے‌گی۔ذاتی ڈِسکام اَور ریاستی بِجلی محکموں  سَمیت تمام ڈِسکام اِس اسکیم کے تحت مالیاتی امداد کے لئے اہل ہوں‌گی۔ڈِسکام مخصوص نیٹ ورک ضرورت کو ذہن میں رکھتے ہوئے دیہی بنیادی ڈھانچہ شدہ کاموں کو مضبوت بنانے کو برتری دیں‌گی اَور اِس اسکیم کے تحت آنے والی منصوبہ بندیوں کے لئے تَفْصِیلی منصوبہ بندی رپورٹ تیار کریں‌گی۔اِس اسکیم کو نافذ کرنے کے لئے نوڈل ایجنسی دیہی برق کاری کارپوریشن (آر اِی سی) ہوگی۔ آر اِی سی،اسکیم کے لاگو کئے جانے کی ماہانہ ترقیاتی رپورٹ کو  وزرات توانائی   اَور مرکزی بجلی حاکم کے سامنے پیش کرے‌گی۔ اِس رپورٹ میں مالی اَور حقیقی ترقی کی تفصیل دی جائے‌گی۔

اسکیم کی مدت

کام کے لئے خط جاری کئے جانے کی تاریخ سے 24 مہینوں کی مدت کے اندر اسکیم کو مکمل کیا جائے‌گا۔

اسکیم سے فائدہ

دیندیال اُپادھیائے گرام جیوتی یوجنا سے دیہی علاقوں میں بجلی تقسیم کی مدت میں اصلاح ہوگی۔ اس کے ساتھ ہی زیادہ مانگ‌ کے وقت میں لوڈ میں کمی، صارفین کو میٹر کے مُطابق کھپت پر منحصر بِجلی بِل میں اصلاح اَور دیہی علاقوں میں بِجلی کی زیادہ سہولت دی جا سکے‌گی۔

منصوبہ بندیوں کو اجازت دینے کی کاروائی جلد ہی شروع ہوگی۔ اجازت مِلنے کے بعد منصوبہ بندیوں کو پُورا کرنے کے لئے ریاستوں کی تقسیمی کمپنیوں اَور تقسیمی محکمہ کو ٹھیکے دئے جائیں‌ گے۔ ٹھیکے دینے کی مدت سے 24 مہینے کے اندر منصوبہ بندیوں کو پُوری کیا جانا چاہئے۔

ماخذ : صحافتی معلومات دفتر (پی آئی بی)،حکومتِ حند

3.0
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top