ہوم / دیہی توانائی / پالیسی سپورٹ / جواہر لال نیہرو قَومی شمسی مِشن
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

جواہر لال نیہرو قَومی شمسی مِشن

اِس میں جواہر لال نیہرو قَومی شمسی مِشن اسکیم کی معلومات دی گئی ہے۔

کردار

جواہرلال نیہرو قَومی شمسی مِشن اسکیم کی شروعات 2009 میں آب وہوا تبدیلی پر قَومی کام اسکیم کے ایک حصے کی شکل میں کی گئی۔اِس مِشن کا مقصد 2022 تَک 20 ہزار میگاواٹ قوت والی گرِڈ سے جوڑی جا سکنے والی شمسی بِجلی کی تنصیب اَور 2 ہزار میگاواٹ کے مساوی غیر گرِڈ شمسی طرز عمل کے لئے پالیسی پر مبنی کام اسکیم کی ترقی کرنا ہے۔ اِس میں شمسی حرارتی اَور اشعاعی توانائی دونوں تکنیک کے استعمال کی حمایت کی گئی۔ اِس مِشن کا مقصد شمسی توانائی کے علاقے میں ملک کو عالمی رہنما کی شکل میں قائم کرنا ہے۔

مِشن کے ہدف

مِشن کے ہدف اس طرح ہیں-

  1. 2022 تَک 20 ہزار میگاواٹ قوت والی گرِڈ سے جُڑی شمسی بِجلی پیدا کرنا،
  2. 2022 تَک دو کروڑ شمسی لائٹ سَمیت 2 ہزار میگاواٹ قوت والی غیر گرِڈ شمسی طرز عمل کی تنصیب
  3. 2 کروڑ  ورگ میٹر کی شمسی حرارتی جمعکار علاقے کی تنصیب
  4. ملک میں شمسی پیداوار کی قوت بڑھانے والی سازگار ماحول کی تعمیر اَور
  5. 2022 تَک گرِڈ یکسانیت کا ہدف حاصل کرنے کے لئے تحقیق اَور ترقی کی حمایت اَور صلاحیتی ترقی اعمال کا بڑھاوا شامل ہے۔

مِشن کے مرحلہ

اِس مِشن کو تین حصوں میں لاگو کیا جانا ہے -جواہرلال نیہرو قَومی شمسی مِشن اسکیم کے تحت مقررہ کئے گئے ہدف مرحلہ وار نظام (مرحلہ 1،2،3)میں ہیں اَور اِن کا بیورا نیچے دیا گیا ہے

مرحلہ

مہلت

مجموعی ہدف (ورگ میٹر)

مرحلہ-1

سال 2013 تَک

70 لاکھ

مرحلہ-2

سال 2013-17 تَک

1.50 کروڑ

مرحلہ-3

سال 2017-22 تَک

2 کروڑ

پروگرام کو بڑھاوا دینے کے لئے اُٹھائے گئے دیگر قدم

جواہرلال نیہرو قَومی شمسی توانائی مِشن کی آف گرِڈ اَور عدم ارتکاز شمسی توانائی کے تحت، شعبہ وزرات 27 روپیے فی ڈبلیو پی سے 135 روپیے فی ڈبلیو پی کے درمیان شمسی توانائی پی وی نظام اَور بجلی کارخانوں کی تنصیب کے لئے 30 فیصدی سرمايہ سبسِڈی عطا کرتا ہے۔ خاص زمرے کی ریاستوں یعنی شمال مشرقی ریاستوں، سِکِّم، جمّو اَور کشمیر، ہِماچل پرَدیش اَور اُتّراکھَنڈ، لکْشدیپ اَور انڈمان نِکوبار جزائر کے لئے شعبہ وزرات سرکاری تنظیمات( تجارتی تنظیمات اَور کارپوریشنوں کے لئے نہیں)کے لئے 81 روپئے فی ڈبلیو پی سے 405 روپئے فی ڈبلیو پی کے درمیان 90 فیصد سرمايہ سبسِڈی عطا کرتا  ہے۔ جدید اَور قابل تجدید توانائی شعبہ وزرات، شمسی واٹر ہیٹر نظام، شمسی لالٹین، گھروں اَور سڑکوں کی لائٹیں اَور  پی وی پاور کارخانے جیسے شمسی فوٹو وولٹیکئک نظاموں کے لئے 30 فیصدی تَک کی مرکزی مالی مدد (سی ایف اے) میسّر کروا رہا ہے۔ یہ سی ایف اے پُورے ملک کے لئے ایک جیسا ہے،لیکِن خاص زمرے کی ریاستوں / مرکز محکوم ریاست جزیروں اَور بین الاقوامی حد سے لگے ضِلْعوں میں شمسی واٹر ہیٹر نظام کے لئے سی ایف اے 60 فیصدی تَک اَور کچھ زمروں کی سرکاری اداروں کے لئے شمسی فوٹو وولٹِئک نظاموں کے لئے یہ 90 فیصدی تَک ہے۔

جواہرلال نیہرو قَومی شمسی مِشن (جے این این ایس ایم)کے تحت مختلف لاگو اسکیم

جواہرلال نیہرو قَومی شمسی مِشن (جے این این ایس ایم)کے تحت پہلی طرف دُوسرے حصے میں مختلف اسکیموں کو لاگو کیا جا رہا ہے۔

  • آف گرِڈ اَور عدم ارتکاز شمسی استعمال
  • جے این این ایس ایم کے مرحلے، بَیچ-1 اَور 2 کے تحت نئی گرِڈ متعلق شمسی بجلی منصوبوں (حرارتی بجلی کے ساتھ اختلاط)
  • روف ٹاپ پی وی اَور مختصر شمسی بجلی پیداوار پروگرام (آرپی ایس ایس جی پی)
  • جے این این ایس ایم کے بیچ -1،حصہ 2 (نتیجہ خیزی وقفہ فنڈ) تحت جدید گرِڈ-متعلق شمسی بجلی پروجیکٹ۔

ہندوستان میں دیہاتی اَور ساتھ ہی شہری علاقوں میں جے این این ایس ایم کی شمسی آف-گرِڈ استعمال اسکیم کے تحت شمسی روشنی نظام، شمسی پی وی بجلی کارخانہ اَور شمسی پمپ جیسی ایس پی وی استعمال کی تنصیب کرنے کے لئے 30 فیصدی سرمایہ سبسِڈی عطا کر رہا ہے۔

ماخذ : مقامی اخبار  اَور اطلاع دفتر

2.33333333333
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top