ہوم / دیہی توانائی / پالیسی سپورٹ / توانائی کا تحفظ
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

توانائی کا تحفظ

قوانین اور پالیسیاں

تحفظ توانائی قانون (انرجی کنزرویشن ایکٹ)

توانائی کے تحفظ کی وسیع قابلیت اور توانائی کے بہتر استعمال کے وسیع تر فوائد کے پیش نظر حکومت ہند نے (انرجی کنزرویشن ایکٹ )تحفظ توانائی قانون، (S2 of 2001) 2001نافذ کیا یہ قانون مرکز اور ریاست کی سطح پر قانونی فریم ورک ادارتی انتظامات اور ریگلیولیٹری میکانزم فراہم کرتا ہے تاکہ ملک میں توانائی کی اہمیت/قابلیت مہم انجام دی جاسکے۔ نامزد/مخصوص گراہکوں، استعمال ہونے والی اشیاء/سامان کا اسٹینڈرڈ اور لیبلنگ، انرجی کنزرویشن، بلڈنگ کوڈس، ادارتی سیٹ اپ کا قیام (BEE) اور توانائی بچت فنڈ کا قیام یہ 5 بڑے پرویژن(نکات) ہیں جو اس ایکٹ کے تحت آئے ہیں

تحفظ توانائی قانون یکم مارچ 2002سے نافذ العمل ہوا اور اسی روز سے بیورو آف انرجی افیشینی بھی کارکرد ہوا۔ ہندوستان میں توانائی کی صلاحیت سے متعلق ادارتی سرگرمیاں اور پروگرام اب تحفظ توانائی ایکٹ کے تحت مختلف اعزازی اور لازمی دفعات کے زیر نگرانی انجام پاتی ہیں۔ ای سی ایکٹ میں 2010میں ترمیم کی گئی قانون کی اہم ترمیمات درج ذیل ہیں

تحفظ توانائی (ترمیمی) قانون 2010اہم ترمیمات

  1. اگر کسی مخصوص گراہک کا توانائی کا استعمال طئے شدہ قوانین اور اسٹینڈرڈس کے لحاظ سے کم ہوتا ہے تب طئے شدہ طریقہ کار کا لحاظ رکھتے ہوئے مرکزی حکومت اسے توانائی بچت سرٹیفکٹ (انرجی سیونگ سرٹیفکٹ) جاری کرسکتی ہے۔
  2. مخصوص گراہک اگر طئے شدہ معیار اور قوانین سے زائد مقدار میں بجلی استعمال کرتا ہے تب اسے مرکزی حکومت سے انرجی سیونگ سرٹیفکٹ خریدنا ہوگا طئے شدہ طریقہ کار کا حکم مانتے ہوئے۔
  3. مرکزی حکومت بیورو کے ساتھ کنسلٹ کرکے، انرجی کے استعمال کے برابر فی میٹرک ٹن آئیل کی مقدار طئے کرسکتی ہے۔
  4. تجارتی کمرشیل عمارتیں جنکے پاس 100کلو واٹ کالوڈ ہو اور 120 کے وی اے یا اس سے زیادہ کا کنٹراکٹ ڈیمانڈ ہو وہ EC ایکٹ کے تحت ECBCکے دائرہ کے تحت آسکتے ہیں۔

LED پر مبنی مکانات اور اسٹریٹ لائٹنگ کا قومی پروگرام

یہ اقدام ملک میں توانائی کے حد اہلیت کا پیغام عام کرنے کی کوششوں کا ایک حصہ ہے۔ LEDلائٹس کی عمر کافی طویل ہوتی ہےتقریباً50 گنا زیادہ عام بلب کے مقابلہ میں اور سی ایف ایل کے مقابلہ میں 8تا 10 گنا زیادہ اور اسی لیےایک درمیانی مدت وہ توانائی اور بچت دونوں فراہم کرتے ہیں۔ اس اسکیم کے تحت ایل ای ڈی بلبس، مرحلہ وار شکل میں مارچ2015سے تقسیم کیئے جائیں گے 100 شہروں میں گھریلو اور اسٹریٹ لائٹنگ کے لیے LED لائٹ کی تنصیب کا یہ مکمل پروجیکٹ مارچ2016تک تکمیل کرنا ہے

دہلی میں گراہک ڈومیسٹک انیشینٹ لائٹنگ پروگرام (DELP) کے تحت LED بلب کے لیے درخواستwww.eeslindia.org/Delhi-Launchپر یا اسکے مخصوص نمبر پر ایس ایم ایس بھیج کر داخل کرسکتے ہیں۔ تمام گھریلو گراہکوں کو 10 روپیہ کی ابتدائی ادائیگی کے بعد یہ LED بلب فراہم کیئے جائیں گے 10 روپیہ ماہانہ کے حساب سے 12مہینوں تک انکے بجلی بلب میں اضافی رقم کے ذریعہ بقیہ رقم وصول کی جائیگی اسطرح گھریلو استعمال کیلئے ایک LEDبلب کی قیمت زیادہ تعداد میں خریدی کی وجہ سے موجودہ مارکٹ قیمت کے لحاظ سے کافی کم 130روپیہ ہوگی اسکی بازاری قیمت 350تا600روپیہ ہے دہلی میں سالانہ بچت کاتخمینہ LEDبلب پر 162روپیہ لگایا گیا ہے ان LED بلب کی 3 سال کی وارنٹی ہوگی۔

معیارات اور لیبلنگ پروگرام

توانائی کی قابلیت میں اضافہ کے ایک اہم ترین کلیدی سرگرمی کے طور پر معیارات اور لیبلنگ (S&L)پروگرام کی شناخت کی گئی ہے اسکیم 18مئی2006کولانچ کی گئی۔

اسکیم کا کلیدی مقصد

گراہک کو توانائی کی بچت کرنے والے اور اسطرح پیسہ کی بچت کرنے کی صلاحیت رکھنے والے مارکٹ میں موجود پروڈکٹس کی معلومات فراہم کرنا۔

اسکیم کے تحت آنے والے سازوسامان

  • یہ اسکیم فی الحال 12سامان/آلات پر جاری ہے وہ اے سی، ٹیوب لائٹ، فراسٹ فری ریفریجریٹر، ڈسٹربیوشن ٹرانسفارمرس، انڈکشن موٹرس، ڈائریکٹ کول ریفریجریٹر، گیزر، سیلنگ فین مکرٹی وی، زرعی پمپ ایل پی جی اسٹو اور واشنگ مشین
  • سامان جیسے اے سی، ٹیوب لائٹ، فراسٹ فری ریفریجریٹر اور ڈسٹری بیوشن ٹرانسفارمر کو 7جنوری 2010 سے لازمی لیبلنگ کے تحت لایا گیا ہے دیگر سامان فی الوقت اعزازی لیبلنگ مرحلہ میں ہیں۔

بہتر توانائی لیبلنگ پروگرام جو BEE کے تحت شروع ہوا ہے کا مقصد توانائی کا کم سے کم استعمال کرنا ہے اور وہ بھی گراہک کو مل رہی سہولیات خدمات کو متاثر کیئے بغیر اسٹار رپٹنگ توانائی کی بچت کے بڑھتے ہوئے آردُر میں 1تا5ہوتی ہے۔

Source : مآخذ منسٹری آف پاور

متعلقہ ذرائع

  1. BEE-INDIA
  2. MNRE
  3. DSM based Efficient Lighting Programme (DELP)
2.6
Back to top