ہوم / تعلیم / پالیسیاں اور اسکیمات / مانَک ۔ سائنسی مطالعے کی ایک ترغیب
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

مانَک ۔ سائنسی مطالعے کی ایک ترغیب

اِس حصے میں طالب علموں کو سائنس موضوع میں دلچسپی بڑھانے کے لئے حکومت کے ذریعے چلائی گئی معیاری اسکیم کی معلومات دی جا رہی ہے۔

' مانَک '-طالب علموں کے لئے سائنس کے مطالعے کی ایک ترغیب

مِلِین مائنڈس آگمینٹِگ نیشنل آسپریشن اینڈ نالیج (مانَک)سائنس اَور ٹکنالوجی  وزرات کے ذریعے لاگو ایک قَومی پروگرام ہے جو طالب علموں کے درمیان موجود صلاحیت کو سائنس کے مطالعہ کے لئے اَور تحقیقی کام میں کیریئر بنانے کے لئے مسحور کرتا ہے۔

جُزو

اِس پروگرام کے تین جُزو ہیں-

  • سائنس کی طرف صلاحیت کی شروعاتی کشش اسکیم (ایس اِی اے ٹی ایس)، کے دو ذیلی۔جُزو ہیں۔ 5000 ہزار روپئے کا مانَک انعام اَور کِسی سائنس کیمپ میں عالمی سائنس علمبرداروں کے ذریعے مینٹرشِپ۔
  • بی۔ ایس سی اَور ایم۔ ایس سی سطحوں پر مسلسل تعلیم کے لئے 80،000 روپئے کی شرح سے اعلیٰ تعلیمی وظیفہ (ایس ایچ اِی)۔
  • جوان محققین کے لئے تحقیقی کیریئر کے لئے مطمئن مواقع (اے او آر سی)کے بھی دو ذیلی۔جُزو ہیں مانَک فیلوشِپ اَور مانَک اسٹاف۔

جبکہ، اسکیم کے پہلے جُزو-مانَک  انعام کی تکمیلی ریاستوں /  یونین ٹیریٹریز کے ذریعے مرکزی سطح پر کیا جاتا ہے۔ اسکیم کے دیگر جُزو کا نفاذ سے متعلق تعلیمی / تحقیقی اداروں اَور یونیورسٹیوں وغیرہ کے ذریعے سائنس اَور ٹیکنالوجی محکمہ کے ذریعے مرکزی سطح پر کیا جاتا ہے۔
مانَک انعام اسکیم کا مقصد 10۔15 سال کے عمر گروہوں طلباء کو سائنس کے میدان میں مسحور کرنے اَور کیریئر بنانے اَور اِختراعی کا تجربہ کرنے کے لئے اُن کو سہولت فراہم کرنا ہے۔

اہم خصوصیات

  • اسکیم کے تابع 11وِیں پنج سالہ اسکیم کی منظوری کے مُطابق پنج سالہ اسکیم مدت کے دوران 5000 ہزار روپئے کے مانک انعام کے لئے ملک کے ہرایک اسکول سے دو طلباء (چھٹھی سے لےکر 10وِیں کلاس تَک)کا انتخاب کیا جاتا ہے، تاکہ وہ سائنس کے پروجےکٹ / ماڈل تیار کر سکیں۔ مانَک انعام کے لئے وارنٹ سیدھے طور پر منتخب طالب علم کے نام سے جاری کیا جاتا ہے اَور ریاست / اسکول کے حکام کے ذریعے اُن کے پاس بھیجا جاتا ہے۔
  • اسکیم کے تابع تمام انعام حاصل کنندگان کے لئے ضلعی ستح کی نمائش اَور پروجیکٹ مقابلہ (ڈی ایل اِی پی سی) میں حصہ لینا ضروری ہوتا ہے۔ ضلع سے آئی 5 سے 10 فیصدی بہترین اندراجات کا انتخاب ریاستی ستح کی نمائشوں اَور پروجیکٹ مقابلہ (ایس ایل اِی پی سی)میں حصہ لینے کے لئے کیا جاتا ہے۔
  • ریاست / یونین ٹیریٹریز سے آئی بہترین 5 فیصدی اندراجات (کم از کم پانچ)کا انتخاب قَومی سطح کی نمائش اَور پروجیکٹ مقابلہ (این ایل اِی پی سی)میں شراکت داری کے لئے کیا جاتا ہے۔ تمام سطحوں پر پروجیکٹس کا جائزہ ماہرین کی ایک فیصلہ کن کمیٹی کے ذریعے کیا جاتا ہے۔
  • ڈی ایل اِی پی سی، ایس ایل اِی پی سی اَور این ایل اِی پی سی کے منتخب انعام حاصل کنندگان کے ساتھ ہی پروجیکٹ کی تیاری کے لئے رہنمائی کرنے والے مینٹر / استاد کے لئے شراکت داری / میرِٹ صداقت نامہ جاری کئے جاتے ہیں۔ ضلع، ریاست اَور قَومی سطح پر نمائشیں منعقد کرنے پر آنے والی پُوری لاگت کا منتقل کرنا سائنس اَور ٹکنالوجی محکمہ کے ذریعے کیا جاتا ہے۔
  • مانَک انعام حاصل کنندگان کے لئے طلباء کا انتخاب ہرایک اسکول کے صدر استاد / صدر استانی / صدر کے ذریعے کیا جاتا ہے، جِن کے لِئے سائنس میں دلچسپی رکھنے والے بہترین طالب علم کی نامزدگی بھیجنا اَور اس کے ساتھ ہی نامزدگی اَور انتخاب کے لئے اسکول کے ذریعے مقرر شرطوں کا بھی تفصیل بھیجنا ضروری ہے۔ ضلعی سطح پر تعلیمی افسر مقررہ فارمیٹ میں اپنے دائرہ اختیار کے اسکولوں کی تفصیل تیار کرتے ہیں اَور ریاستی سطح پر تعلیمی حکام کے ذریعے پیشکش ڈی ایس ٹی کے پاس بھیجتے ہیں۔
  • چھٹھی کلاس سے لےکر 10وِیں کلاس تَک کی پڑھائی کرنے والے ملک کے تمام اسکول چاہے وہ سرکاری یا ذاتی ہوں، امداد یافتہ ہو یا بغیر تعاون کے ہوں، چاہے وہ مرکزی حکومت یا ریاستی حکومت یا مقامی اداروں کے ذریعے ہدایت دادہ ہوں، اِس اسکیم میں شراکت داری کے لئے اہل ہیں۔
  • ریاست کے حکام سے اس طرح حاصل کئے گئے پیشکشوں کے لئے اسکیم کے مانکوں کے مُطابق ڈی ایس ٹی میں عمل ہدایت دادہ کی جاتی ہے اَور منتخب طلباء کے نام سے انعام وارنٹوں کو تیار کرنے کے لئے ڈی ایس ٹی کے بینکر کے پاس منتخب طلباء کی فہرست بھیج دی جاتی ہے۔ بینک سے اس طرح حاصل انعام وارنٹوں کو ضلع ستحی تعلیم حکام کے ذریعے منتخب انعام حاصل کنندگان تَک پہُنچانے کے لئے ریاستی ستح کے حکام کے پاس بھیج دیا جاتا ہے۔

تکمیل کی ثابِق صورت حال

یہ اسکیم دسمبر 2009 کے دوران شروع کی گئی تھی۔ ہالانکہ اِس کی تکمیل 2009-10 میں ہی شروع ہو پایا تھا اَور سال کے دوران 1.26 لاکھ انعام منظور کئے گئے تھے۔ اس کے علاوہ سال 2010۔11 کے دوران 2.50 لاکھ انعام منظور کئے گئے تھے اَور اب تک 5،36،598 انعام منظور کئے گئے۔ اَور مانَک انعام وارنٹوں کی شکل میں منتخب طلباء کے پاس 268.30 کروڑ روپئے کی رقم بھیجی گئی۔
اسکیم کی شروعات سے لےکر ڈی ایل اِی پی ایس سی میں دو لاکھ سے زیادہ انعام حاصل کنندگان نے حصہ لیا۔ اَور ڈی ایل اِی پی سی کے منتخب تقریباً 15 ہزار انعام حاصل کنندگان نے ایس ایل اِی پی سی میں حصہ لیا۔ اِس اسکیم میں تمام 35 ریاست /  یونین ٹیریٹریز نے حصہ لیا۔ ڈی ایل اِی پی سی، ایس ایل اِی پی سی سے متعلق خرچ کو پُورا کرنے کے لئے الیکٹرانک فنڈ ٹرانسفر کے ذریعے ریاست کے ناڈل افسر کے پاس اُن کے مشتہرہ بینک کھاتے میں رقم بھیج دی جاتی ہے۔
12وِیں پنج سالہ اسکیم (2012۔ 17)کے دوران یہ اسکیم جاری ہے۔ یہ مُمکِن ہے کہ اِس کا دائرہ بھی بڑھایا جا سکتا ہے اَور اِس کے تابع سالانہ فی اسکول ایک انعام کو منظوری دینے کی پیشکش سرکار کے التواء ہے۔ اَگر اِس کو منظوری مِلتی ہے تو اِس کا معنی یہ ہوگا کہ پنج سالہ اسکیم مدت کے دوران سالانہ تقریباً چار لاکھ انعامات کے حساب سے دو مِلین (20 لاکھ)انعام کو منظوری مِلے‌گی، اِس سے ملک کے 4.5 سے لےکر پانچ لاکھ اسکولوں میں سے تقریباً 80 سے 90 فیصدی اسکولوں کی شراکت داری مُمکِن ہو سکے‌گی۔
اِس اسکیم کے بارے میں زیادہ معلومات کے لئے یہاں کلِک کریں۔

ماخذ : پسوکا دفتر (پریس انفارمیشن بیورو۔پی آئی بی)

2.875
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top