ہوم / تعلیم / بچّوں کی دنیا / قَومی وظائف اَور انعام
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

قَومی وظائف اَور انعام

یہ سیکشن تعلیم میں بچّوں کی صلاحیت کو حوصلہ افضائی کرنے کے لئے قَومی وظیفہ اَور انعام کی معلومات دیتا ہے۔

قَومی تعلیمی تحقیق اَور تربیتی کونسل (این سی ای آر ٹی) مقداری اَور کیفی تعلیمی ترقی کو حوصلہ افضائی کرتی ہے اَور عدم مساوات دور کرنے اَور تمام طلباء کو مماثل تعلیمی مواقع فراہم کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ این سی ای آر ٹی طلباء میں تعلیمی صلاحیت، قَومی صلاحیتی کھوج اسکیم کے ذریعے اُبھارا کرتی ہے۔ یہ فن کارانہ اَور تحقیقی صلاحیت کے لئے چچا نیہرو پینشن کے ذریعے فن کارانہ خاصیت کی بھی تعریف کرتی ہے۔

قَومی وظائف

کلاس آٹھ کے لئے قَومی صلاحیتی کھوج امتحان

وظائف: ہدایت دادہ امتحان کی بنیاد پر آٹھوِیں کلاس کے امتحان میں شامل ہونے والے طلباء کے ہرایک گروہ میں سے ایک ہزار وظائف دی جائیں‌گی۔ قابلیت : تسلیم شدہ اسکولوں کی آٹھوِیں کلاس میں پڑھنے والے طلباء اُن ریاستوں یا یونین ٹیریٹریز، جہاں اسکول ہدایت دادہ ہیں، ذریعے ہدایت دادہ جانچ امتحان میں شامل ہونے کے لائق ہیں۔ اِس میں مقامیت کا ممنوع نہیں ہوتا ہے۔
امتحان یوجنا: آٹھوِیں کلاس کے لئے تحریری امتحان کا طریقہ درج ذیل ہوگا :
پَہلے حصے کی ریاست یا یونین ٹیریٹریز میں امتحان میں دو حصہ ہوں‌گے

  1. ذہنی صلاحیتی جانچ (میٹ)اَور
  2. علمیت صلاحیتی جانچ (سیٹ)، جِس میں سماجی سائنس، سائنس اَور ریاضی موضوع سے سوال پوچھے جاتے ہیں۔

دُوسرے مرحلے کی قَومی سطح کے امتحان میں

  • ذہنی صلاحیتی جانچ (مےٹ)،
  • علمیت صلاحیتی جانچ (سیٹ)، جِس میں سماجی سائنس، سائنس اَور ریاضی سے سوال پوچھے جاتے ہیں۔
  • انٹرویو۔ قَومی سطح کی تحریری  امتحان میں کامیاب ہونے والے طلباء کو ہی انٹرویو میں مدعو کیا جاتا ہے۔

قَومی صلاحیتی کھوج اسکیم

قابلیت کیندریہ ودیالیے، نوودئے ودیالیے، سینِک اسکول سَمیت کسی بھی قسم کی تسلیم شدہ اسکول کی دَسوِیں کلاس میں پڑھنے والے تمام طالب علم اُس ریاست سے، جہاں اسکول واقع ہے، ریاستی ستح کے امتحان میں شامل ہونے کے لائق ہیں۔ ہالانکہ اِس میں مقامیت سے متعلق کوئی ممنوع لاگو نہیں ہوتا ہے۔
درخواست کے عمل
ملک بھر میں دَسوِیں کلاس میں پڑھنے والے طالب علم مذکورہ بالا امتحان کے بارے میں اپنی ریاست یا یونین ٹیریٹریز کی حکومت کے ذریعے جاری اطلاع کو اخباروں  یا اسکول میں دیکھتے رہیں اَور اشتہار یا معلومات میں بیان کردہ ضروریات کے مُطابق آگے بڑھیں۔
امتحان
این سی ای آر ٹی کے ذریعے ہدایت دادہ کئے جانے والی دُوسرے سطح کی جانچ میں ضروری نمبر میں امیدواروں کو نامزد کرنے کے لئے ریاستی ستح کے امتحان کے دو حصہ ہوتے ہیں :
حصہ ۔1 ذہنی صلاحیتی جانچ (مَیٹ)اَور
حصہ۔ 2 علمیت صلاحیتی جانچ (سَیٹ)۔

اولمپیاڈ

نیشنل سائبر اولمپیاڈ

قابلیت
سی بی ایس ای (CBSE)، آئی سی ایس ای (ICSE)اَور ریاستی بورڈوں سے متعلق انگریزی ذرائع کے اسکولوں میں تِیسری سے 12وِیں کلاس میں پڑھنے والے بچّے نیشنل سائبر اولمپیاڈ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ نَووِیں سے 12وِیں کلاس کے وَیسے بچّوں کو، جو فن، کاروبار اَور سائنس میں اپنا کیریئر بنانا چاہتے ہیں، اِس مقابلہ میں شامل ہو سکتے ہیں، کیونکہ اِس میں طلباء کی کمپیوٹر کے فن کی جانچ کی جاتی ہے۔

نیشنل سائنس اولمپیاڈ

طلباء کا میعاد : یہ مقابلہ کلاس تین سے کلاس 12 تک کے طلباء کے لئے کھُلی ہے اَور وابستہ اسکولوں کو مخصوص فارم میں میعاد بھیجنا ہوگا۔

 

نیشنل میتھیمیٹِکل اولمپیاڈ

قَومی سطح پر ریاضی اولمپیاڈ 1976 سے قَومی اعلیٰ ریاضی کونسل این بی ایچ ایم۔ نیشنل بورڈ فار ہائر میتھیمیٹِکس)کی اہم سرگرمی اَور کوشش ہے۔ اِس سرگرمی کا ایک خاص مقصد ہائی اسکول کے بچّوں میں ریاضی کی صلاحیتوں کا پہچان کرنا ہے۔ این بی ایچ ایم میں ہرسال ہونے والے عالمی اولمپیاڈ میں شامل ہونے کے لئے ہندوستانی ٹیم کے انتخاب اَور تربیت کی ذمہ داری بھی لی ہے۔
اولمپیاڈ مقابلہ کے انعقاد کے لئے ملک کو 16 علاقوں میں بانٹا گیا ہے۔ عالمی ریاضی اولمپیاڈ (آئی ایم او)میں ہندوستان کی شراکت داری کے لئے اولمپیاڈ پروگرام میں درج ذیل مراحل ہوتے ہیں
پَہلا مرحلہ : علاقائی ریاضی اولمپیاڈ (آر ایم او) ملک کے مختلف علاقوں میں عام طور پر پر ہرسال ستمبر اَور دسمبر کے پَہلے اتوار کے درمیان آر ایم او کا انعقاد ہوتا ہے۔ آر ایم او میں شامل ہونے کے لئے 11وِیں کلاس کے تمام اسکُولی بچّے لائق ہیں۔ اِس میں تین گھنٹے کی تحریری امتحان کا انعقاد کیا جاتا ہے، جِس میں چھے سے سات سوال ہوتے ہیں۔
دُوسرا مرحلہ : ہندوستانی قَومی ریاضی اولمپیاڈ (آئی این ایم او) : آئی این ایم او  ہرسال فروری کے پہلے اتوار کو مختلف علاقوں کے مراکز پر ہوتا ہے۔ آر ایم او کی بنیاد پر مختلف علاقوں کے منتخب طالب علم ہی آئی این ایم او میں شامل ہونے کے لائق ہوتے ہیں۔ آئی این ایم او چار گھنٹے کا تحریری امتحان ہوتا ہے۔ سوال خط مرکزی سطح پر تیار ہوتے ہیں اَور پُورے ملک میں ایک جیسے ہوتے ہیں۔ آئی این ایم او میں اولین مقام پر رہنے والے 30۔35 طلباء کو صلاحیت کا صداقت نامہ دیا جاتا ہے۔
تِیسرا مرحلہ : عالمی ریاضی اولمپیاڈ تربیتی کیمپ (آئی ایم او ٹی سی) : یو این ایم او صداقت نامہ ہولڈروں کو ہرسال مئی۔جون میں منعقد ہونے والے مہینے بھر کے تربیتی کیمپ میں مدعو کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ گزشتہ سال کے وَیسے آئی این ایم او صداقت نامہ ہولڈروں کو، جِنہوں نے پُورے سال فاصلاتی تعلیم کو تسلی بخش طریقے سے پُورا کیا ہو، دُوسرے دائرے کی تربیت کے لئے پھر سے مدعو کیا جاتا ہے۔ کیمپ کے دوران منعقد انتخاب امتحان کے پوائنٹ کی بنیاد پر کنیۓ اَور وریۓ گروہوں سے بہترین چھے طلباء  کا انتخاب عالمی ریاضی اولمپیاڈ میں ہندوستان کی نمائندگی کے لئے چُنا جاتا ہے۔
چَوتھا مرحلہ : عالمی ریاضی اولمپیاڈ (آئی ایم او) : کیمپ کے آخرمیں منتخب چھے رکنی ٹیم ایک رہنما اَور ایک نائب رہنما کے ساتھ آئی ایم او میں ہندوستان کی نمائندگی کرتی ہے، جو عام طور پر جولائی میں مختلف ممالک میں منعقد ہوتا ہے۔ آئی ایم او میں ساڑھے چار ۔چار گھنٹے کی دو تحریری امتحان ہوتی ہے، جِس کو دو دن میں کم از کم ایک دن کے وقفے پر منعقد کیا جاتا ہے۔ آئی ایم او کے مقام تَک جانے اَور آنے میں قریب دو ہفتے کا وقت لگتا ہے۔ آئی ایم او میں سونا، چاندی اَور کانسہ کا تمغہ جیتنے والی ہندوستانی ٹیم کے طلباء  کو اگلےسال کے کیمپ کے آخرمیں منعقد باضابطہ تقریب میں این بی ایچ ایم سے حسب ترتیب : پانچ ہزار، چار ہزار اَور تین ہزار روپئے کا نقد انعام دیا جاتا ہے۔ وزارت ترقی انسانی وسائل آٹھ رکنی ہندوستانی وفد کی غیرملکی دورہ کا خرچ دیتا ہے، جبکہ این بی ایچ ایم (ڈی اے ای)ملک کے اندر ہونے والے تمام پروگراموں اَور عالمی شراکت داری سے منسلک تمام خرچ منتقل کرتا ہے۔
ریاضی اولمپیاڈ کے لئے نصاب: ریاضی اولمپیاڈ کا نصاب (علاقائی، قَومی اَور عالمی)پری۔ڈگری کالج ریاضی ہے۔ پریشانی کا سطح آر ایم او سے آئی این ایم او اور پھر آئی ایم او تَک بڑھتا جاتا ہے۔
ریاضی اولمپیاڈ کے لئے کچھ سفارش کردہ کتابیں ہیں-

  • میتھیمیٹِکس اولمپیاڈ پرائمر، وی کرِشنا مورتی، سی آر پرانیسچر، کےاین رنگناتھن اَور بی جے وینکٹ چلا کے ذریعے (انٹرلائن پبلِشِنگ پرائیویٹ لمیٹڈ، بینگلورو)
  • چیلنج اینڈ تھرِل آف پری کالج میتھیمیٹِکس، وی کرِشنا مورتی، سی آر پرانیسچر، کےاین رنگناتھن اَور بی جے وینکٹ چلا کے ذریعے (نیُو ایج اِنٹرنیشنل پبلِشرس، نَئی دِلّی)

ریاضی اولمپیاڈ امتحان اسکیم کی پُوری معلومات کے لئے کے لئے یہاں کلِک کریں۔

قَومی صلاحیتی وظیفہ اسکیم

عمل آوری

قَومی صلاحیتی وظیفہ اسکیم کی شروعات 1961۔62 سیشن سے شروع کی گئی ہے۔ اِس اسکیم کا مقصد عقلمند لیکِن غریب طلباء کو میٹرک کے مابعد مطالعے کے لئے وظیفہ دینا ہے تاکہ وہ غربت کے باوجود اپنا مطالعہ جاری رکھ سکیں۔ دیہی علاقوں کے کلاس 6 سے 12 کے عقلمند بچّوں کے لئے یہ وظیفہ اسکیم 1971۔72 سے لاگو کی گئی ہے جِس کا مقصد مطالعے کے لئے یکساں مواقع میسّر کرانا ہے۔ 9وِیں اسکیم تَک یہ اسکیمیں مرکز کے ذریعے امداد یافتہ اسکیموں کے طور پر لاگو کی گئیں۔ محکمے نے لاگو کرنے کے لئے اب اِن اسکیموں کو مِلاکر ' قَومی صلاحیتی وظیفہ اسکیم ' بنائی ہے۔ یہ ترمیم شُدہ اسکیم قابلیت سے متعلق پیمانوں اَور وظائف کی شرح وغیرہ میں تبدیلی کو مقرر کرتی ہے۔

مقصد

اِس اسکیم کا مقصد کلاس 9 اَور 10 میں زیر تعلیم دیہی علاقوں کے لائق طلباء اَور میٹرک سے لےکر پوسٹ گریجوئیشن سطح تَک سَرکاری اسکولوں، کالجوں اَور یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم لائق حاصل طلباء کو مالی امداد فراہم کرنا ہے۔

موضوع۔ علاقہ

کلاس 9 اَور 10 کے لئے وظائف دیہی علاقے کے اسکولوں، سَرکاری اسکولوں اَور ترقی سیکشن میں واقع اسکولوں میں پڑھنے والے بچّوں کے لئے میسّر ہے۔ میٹرک کے بعد سے پوسٹ گریجوئیشن سطح تک کے نصابوں کے لئے صوبہ وار صلاحیت کی بنیاد پر ریاستوں اَور یونین ٹیریٹریز میں اسکولوں، کالجوں اَور یونیورسٹیوں میں وظائف میسّر ہیں۔ وظیفہ اُس ریاست / یونین ٹیریٹریز کی حکومت کے ذریعے فراہم کی جاتی ہے جِس کا طالب علم باشندہ ہے یا جِس سے اُس نے وہ امتحان کامیاب کی ہے، جِس کے بنیاد پر اُس کو وظیفہ فراہم کی گئی ہے۔ دیہی علاقوں میں اسکولوں کی پہچان ریاستی حکومت / یونین ٹیریڈریز کے انتظامیہ کے ذریعے کی جائے‌گی۔

علاقہ اَور اہلیت

کلاس 9 اَور 10 کے طلباء کے لئے وظائف صرف دیہی علاقے کے سَرکاری اسکولوں میں زیر تعلیم طلباء کے لئے میسّر ہوں‌گی۔
جِن طلباء نے نیچے دئے طبقات میں، سائنس اَور کاروباری موضوعات میں کُل مِلاکر 60 فیصدی اَور فیکلٹی آف ہیومنٹیز میں 55 فیصدی یا اُس سے زیادہ پوائنٹ حاصل کئے ہوں، اُن کو ہی دیگر شرطوں کے ادھین قَومی صلاحیت وظیفہ اسکیم کے لئے اہل سمجھا جائے‌گا-

  • 10وِیں کلاس / میٹرک / ہائی اسکول - 10 + 2 سطح / گریجویٹ کے طلباء کو وظیفہ فراہم کرنے کے لئے،
  • 10 + 2 نظام کے سینئر سیکنڈری بورڈ امتحان کی 12وِیں یا گریجویٹ اَور اُس کے بعد کے نصابوں کے اول سال میں وظیفہ فراہم کرنے کے لئے

کوئی بھی طالب علم جِس کو قَومی صلاحیتی وظیفہ حاصل ہو رہا ہو، وہ مطالعے کے لئے کوئی بھی دیگر وظیفہ حاصل نہیں کر سکے‌گا۔ ویسے طالب علم جو نَوکری کر رہے ہیں وہ اِس وظیفہ کو حاصل کرنے لائق نہیں ہوں‌گے۔
اِس اسکیم کے تحت وظیفہ حاصل کرنے کے دوران طالب علم جِس ادارے میں مطالعہ کر رہا ہو، اُس کے ذریعے فیس میں چھوٹ کا فائدہ لے سکے‌گا۔ ساتھ ہی، وہ امیدوار جِنہوں نے وظیفہ کے لئے درخواست دینے کے ایک سال سابق کوالیفائنگ امتحان کامیاب کی ہوں، وہ اِس کو حاصل کرنے کے لائق نہیں ہوں‌گے۔

 

سرپرستوں کی آمدنی کی حد

اِس اسکیم کے تحت تمام زمروں میں وظیفہ صرف اُن طلباء کو دی جائے‌گی جِن کے سرپرستوں / والدین کی سمست ماخذ سے سالانہ آمدنی 1 لاکھ روپیے زیادہ نہیں ہوں۔

متعلقہ ماخذ

  1. www.ncert.nic.in
2.57142857143
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top