ہوم / زراعت / قَومی دوامی کاشت کاری مِشن / قَومی دوامی کاشت کاری مِشن
شیئر
Views
  • صوبہ Open for Edit

قَومی دوامی کاشت کاری مِشن

اِس صفحہ میں قَومی دوامی کاشت کاری مِشن۔ ہدایات کے بارے میں بتایا گیا ہے۔

کردار

ہندوستانی زراعت میں بنیادی طور پر ملک کے خالص بُوائی علاقے کا تقریباً 60 فیصدی بارش شدہ سیرابی علاقہ شامل ہے اَور یہ تمام اناج کی پیداوار میں تقریباً 40 فیصدی کی شراکت دیتی ہے۔اس طرح بارش شدہ سیرابی زرعی جوتوں کی ترقی کے ساتھ۔ساتھ قدرتی وسائل کا تحفظ ملک میں اناجوں کی بڑھتی ہوئی مانگ کو پُورا کرنے کی کنجی ہے۔اس سمت میں قَومی دوامی کاشت کاری مِشن(این ایم ایس اے) تیار کیا گیا ہے جِس سے کہ مشترکہ کھیتی،آبی استعمال مہارت،مٹی صحتی انتظام  اَور وسائل  کے  تحفظ کو بڑھانے پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے خصوصی طور پر بارش شدہ سیرابی علاقوں میں زرعی پیداواری بڑھائی جا سکے۔

مِشن کا مقصد

این ایم ایس اے کے من درجہ ذیل مقصد ہوں‌گے-

  1. کاشت کاری کو مقام مخصوص مربوط / متحدہ زرعی نظام کو بڑھاوا دےکر اور زیادہ پیداکار،دوامی،مُستفید اَور آب وہوا لوچ دار بنانا۔
  2. بہتر مٹی اَور نمی کے تحفظی اقدامات کے ذریعے سے قدرتی وسائل کا تحفظ کرنا۔
  3. مٹی زرخیزی نقشوں،وسیع اَور مختصر غذائی  مادوں کے مٹی کی جانچ پر منحصر اطلاقی بہتر کیمیائی کھادوں کے استعمال وغیرہ کی بنیاد پر وسیع مٹی صحتی انتظامی طریقہ کار اپنانا۔
  4. ' فی بوند زیادہ فصل حاصل کرنے کے لئے اثر پذیری بڑھانے کے لئے موثر آبی انتظام کے ذریعے آبی وسائل کا زیادہ سے زیادہ استعمال۔
  5. آب وہوا کی تبدیلی کی تقلید اَور کم یابی کے میدان میں دیگر چالو مِشنوں یعنی قَومی کاشت کاری توسیع اَور ٹکنالوجی مِشن،قَومی اشیائےخوردنی حفاظتی مِشن،قَومی زرعی آب وہوا لوچ دار پہل(این آئی سی آر اے)وغیرہ کی مدد سے کسانوں اَور پندھارِیوں کی صلاحیت بڑھانا۔
  6. مہاتما گاندھی قَومی دیہی روزگار گارنٹی اسکیم(منرےگا)،مشترکہ پندھارا پروگرام(آئی ڈبلیو ایم پی)،آرکے وی وائی وغیرہ جیسی دیگر اسکیموں/ مِشنوں سے وسائل کو لےکر اَور این آئی سی آر اے کے ذریعے بارش شدہ سیرابی تکنیکیوں کو اہم دھارا میں لاتے ہوئے بارش شدہ سیرابی کاشت کاری کی پیداواری سُدھارنے کے لئے منتخب کردہ بلاکوں میں تجرباتی ماڈل،اَور این اے پی سی سی کی سرپرستی میں قَومی دوامی کاشت کاری مِشن کے اہم قابِل تقسیم کو پُورا کرنے کے لئے موثر اَور اندرونی محکمانہ/وزرات ہم آہنگی قائم کرنا۔

مِشن کی حکمت عملی

مِشن کے مقاصد کو حاصل کرنے کے لئے،این ایم ایس اے من درجہ ذیل ملٹی۔پروگرام حکمت عملی کی تقلید کرے‌گا۔

  1. ضمیمہ / بقیہ پیداواری نظام کے ذریعے اشیائےخوردنی کی حفاظت متعین کرنے،ذریعہ معاش کے مواقع  بڑھانے فصل کی ناکامی کو کمترکرنے کے لئے فصل،مال مویشی اَور ماہی پروری،باغبانی اَور چراگاہ پر منحصر مشترکہ کاشت کاری کو شامل کرتے ہوئے متحد زراعتی نظام کو فروغ دینا۔
  2. وسائل تحفظ تکنیکیوں(آن فارم اَور آف فارم دونوں)کو مقبولِ عام بنانا اَور ایسے طریقوں کی شروعات کرنا جو انتہائی آب وہوا کے واقعات یا مصیبتیں جیسے لَمبے سُوکھے دور،سیلاب وغیرہ کے وقت پر کم یابی کی کوششوں میں مدد کریں‌گے۔
  3. میسّر آبی وسائل کے موثر انتظام  کو فروغ دینا اَور مانگ اَور سپلائی سائڈ انتظام  حل سے منسلک ہوئی تکنیکیوں کے اطلاق کے ذریعے فنِ آب کے استعمال کو بڑھانا۔
  4. بلند تر فارم پیداوری،اعلیٰ مٹی علاج،اضافی واٹر ہولڈنگ صلاحیت، کیمیائی مادوں/ توانائی کا بہتر استعمال اَور اضافی مٹی کاربن ذخیرہ کے لئے اعلیٰ زراعتی نظام کی حوصلہ افزائی کرنا۔
  5. مقام اَور مٹی خاص فصل انتظام طریقہ کار کے اپنانے اَور زیادہ سے زیادہ کیمیائی کھاد استعمال کو سہل بنانے کے لئے جی آئی ایس پلیٹ فارم پر زمینی استعمال جائزہ،مٹی کے خاکہ کا مطالعہ اَور مٹی تجزیہ کے ذریعے مٹی وسائل پر ڈاٹابیس کی تخلیق  کرنا۔
  6. مٹی کی صحت سُدھارنے، اضافی فصل پیداواری اَور زمین اَور آبی وسائل کی خوبی قائم رکھنے کے لئے مقام اَور فصل خاص مشترکہ غذائی اجزاء کے انتظام کے طریقہ کار کو بڈھاوا دینا۔
  7. خاص کاشت کاری آب وہوا حالات کے لئے آب وہوا کی تبدیلی کی تقلید اَور  کم یابی حکمت عملیوں میں جان کار اداروں اَور کاروباریوں کو شامل کرنا۔منرےگا،آئی ڈبلیو ایم پی،آرکےوی وائی،قَومی اشیائےخوردنی حفاظتی مِشن(این ایف ایس ایم) مشترکہ باغبانی ترقی مِشن (ایم آئی ڈی ایچ)،قَومی کاشت کاری توسیع اَور ٹکنالوجی مِشن (این ایم اے اِی اینڈ ٹی)وغیرہ جیسی دیگر اسکیموں / مِشنوں سے تال میل،تبدیلی اَور سرمایہ کاری اُٹھا کرکے نقصان کے علاقوں میں اَور صورت حال مخصوص تقرری سے اور زیادہ پہُنچ‌کے ساتھ بارش شدہ سیرابی ٹکنالوجیوں کے نشر واشاعت اَور منظوری کے ذریعے متحد ترقی متعین کرنے کے لئے تجرباتی طور پر چُنِندہ بلاکوں میں آب وہوا پیرا میٹروں کے مُحَرِّک صلاحیت کے مُطابق پروگرام اوریئنٹڈ مداخلت۔کسان طبقے کے فائدہ کے لئے ایک سہولت پردہ / فراہم کنندہ  نظام میسّر کرانے کے لئے ریاستی حکومت کے ذریعے ریاستی کاشت کاری درسگاہوں (ایس یو)،کاشت کاری سائنسی مراکز(کے وی کے)،ہندوستانی زرعی تحقیقی کونسل(آئی سی اے آر)مراکز،تِجارتی تنظیمات وغیرہ جیسے جان کار شراکت داروں سَمیت مختلف پندھارِیوں کے ساتھ ایک وفاقی نظریہ تیار کیا جا سکتا ہے۔
  8. ریاستی حکومت انتخاب کے شفاف نظام اَور نگرانی کے تشریح شدہ عمل کے ذریعے اُن علاقوں میں جہاں محدود سرکاری بنیادی ڈھانچہ میسّر ہے،ایک لائین محکمے کے ذریعے مانیٹرِنگ کے معاملے میں جماعت / گرام وِکاس یوجنا کی تکمیل کے لئے شہرت یافتہ ایجنسیوں کو لگا سکتی ہے۔
  9. مختلف عناصر کی تکنیکی عمل پذیری اَور آب وہوا میں  لوچ لانے کے بارے میں اُن کی تاثیر پر باقاعدہ تازہ ترین اطلاعات کے لئے قَومی صلاح کار کونسل کے لئے تقلیدی مدعے اَور آب وہوا تبدیلی کم یابی پر مضبوت تکنیکی مانیٹرِنگ اَور تعامل نظاموں مرکزی اداروں اَور ریاستی کاشت کاری درسگاہوں کے ماہر ایسی تکنیکی مانیٹرِنگ / تعامل کے حصہ ہوں‌گے۔تکمیلی ایجنسیوں کی صلاحیتی تعمیر کو مینیج  کےذریعے سنبھالا جائے‌گا۔
  10. قَومی آب وہوا تبدیلی کام کی منصوبہ بندی کی سرپرستی میں این ایم ایس اے کے مِشن دستاویز میں نشان زدہ مداخلت کی تکمیلی رابطہ،جائزہ اَور تال میل کے لئے پلیٹ فارم قائم  کرنا۔

مِشن کے کام یا عنصر

این ایم ایس اے کی من درجہ ذیل چار اہم پروگرام عنصر یا سرگرمیاں ہیں-

بارش سُدہ سیرابی علاقہ ترقی(آر اے ڈی)

آر اے ڈی کاشت کاری نظام کے ساتھ۔ساتھ قدرتی وسائل کی ترقی اَور تحفظ کے لئے علاقہ پر منحصر نظریہ اپنائے‌گا۔یہ عنصر ' واٹرشیڈ پلس فریم ورک میں تیار کیا گیا ہے یعنی منرےگا،این ڈبلیو ڈی پی آر اے،آروی پی اینڈ ایف پی آر،آرکےوی وائی،آئی ڈبلیو ایم پی وغیرہ کے تحت پنّدھارا ترقی اَور مٹی تحفظ سرگرمیاں / کاموں کے ذریعے قدرتی وسائل کی بنیاد / میسّر / تخلیق شدہ اثاثوں کی ممکنہ افادیت تلاش کرنا۔یہ عنصر کاشت کاری کے متحد کثیر عناصر جیسے کہ فصل،باغبانی،مال مویشی،ماہی پروری،زرعی پر منحصر آمدنی تخلیق شدہ کرنے والی سرگرمیوں کے ساتھ جَنگلات اَور قیمت میں اضافہ کے ذریعے بہتر زرعی تربیت شروع کرے‌گا۔

فارم پر آبی انتظام(او ایف ڈبلیو ایم)

موثر آن فارم آبی انتظام  تکنیکیوں اَور آلات کو بڑھاوا دےکر او ایف ڈبلیو ایم ابتدائی طور پر اضافی پانی کے استعمال فن پر فوکس کرے‌گا۔یہ نہ صرف فنِ استعمال  پر فوکس کرے‌گا بلکہ،آر اے ڈی عنصر کے ساتھ مِل‌کر،بارش کا پانی موثر ذخیرہ اَور انتظام پر بھی زور دے‌گا۔آبی تحفظ تکنیکیاں،موثر سپردگی اَور نظام تقسیم اپنانے کے لئے مدد بڑھائی جائے‌گی۔آب استعمال کنندہ انجمنوں وغیرہ کو تیار کرکے ساجھے کے وسائل کے مانِند تقسیم اَور انتظام پر بھی زور دیا جائے‌گا۔فارم پر ہی آبی تحفظ کے لئے،منرےگا فنڈ کا استعمال کرتے ہوئے فارم تالابوں کی کھدائی کی جا سکتی ہے اَور ارتھ ریمووِنگ مشینری(منرےگا کے تحت کھدائی کی حد تک قابل کاروائی نہیں ہے)۔

مٹی صحتی انتظام(ایس ایچ ایم)

ایس ایچ ایم کا مقصد بقیہ انتظام سَمیت مقام اَور فصل خاص دوامی مٹی صحتی انتظام ،وسیع۔کم یابی غذاییتی انتظام کے ساتھ مٹی زرخیزی نقشوں کے سوجن اَور جُڑاو کے طریقے سے نامیاتی کھیتی طریقہ کار،زمینی صلاحیت  پر منحصر بہتر زمینی استعمال،کیمیائی کھاد کے بہتر استعمال اَور مٹی فرسودگی / اِنْحِطاط کو کم تر کرنے کو بڑھاوا دینا ہوگا۔وسیع فیلڈ سطح پر  سائنس داں جائزوں کے ذریعے زمین اَور مٹی خصوصیات سے متعلقہ نقشوں اَور ڈاٹابیس کی بنیاد پر جغرافیائی اطلاعی نظام (جی آ ئی ایس)کے ذریعے تیار کی گئی زمین کا استعمال اَور مٹی کی خصوصیات پر منحصر طریقوں کے مختلف اعلیٰ پیکجوں کے لئے امداد دستیاب کرائی جائے‌گی۔

آب وہوا تبدیلی اَور دوامی زرعی۔مونیٹرِنگ،ماڈلِنگ اَور نیٹ ورکنگ(سی سی ایس اے ایم ایم این)

سی سی ایس اے ایم ایم این آب وہوا اسمارٹ دوامی انتظام  طریقوں اَور مقامی کاشت کاری آب وہوا حالات کے مناسب متحد کاشت کاری نظام کے علاقے میں تجرباتی آب وہوا تبدیلی تقلید / کم یابی تحقیق / ماڈل منصوبہ بندیوں کے طور پر آب وہوا تبدیلی سے متعلق اطلاع اَور علم کی بائی ڈائرکشنل(زمین / کسانوں کے لئے تحقیق / سائنس داں استحکام اَور برعکس) نشر و اشعات اَور سوجن کرے‌گا۔تکنیکی اہلکاروں کے سرشار ماہر جماعت کو این ایم ایس اے کے اندر ایک ادارہ کا شکل دیا جائے‌گا جو سال میں تین بار مِشن کی سرگرمیوں کی سختی سے مانیٹرِنگ اَور جائزہ کرے‌گا جِس کے اَور قَومی کمیٹی کو مطلع کرے‌گی۔

ماخذ : نیشنل مِشن فار سسٹینیبل ایگری کلچر(این ایم ایس اے)

2.66666666667
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Back to top