ہوم / زراعت / زرعی پالیسی اَور اسکیمیں / دیہی گودام اسکیم
شیئر

دیہی گودام اسکیم

دیہی گودام اسکیم ایک تعارف

یہ جگ ظاہر ہے کہ چھوٹے کسانوں کی مالی وُسعت اِتنی نہیں ہوتی کہ وہ بازار میں سازگار بھاو مِلنے تَک اپنی پیداوار کو اپنے پاس رکھ سکیں۔ ملک میں اِس بات کی ضرورت محسوس کی جاتی رہی ہے کہ کسان طبقے کو ذخیرہ کاری کی سائنس داں سہولیات عطا کی جائیں تاکہ پیداوار کا نقصان اَور خرابی روکی جا سکے اَور ساتھ ہی کسانوں کی قرض سے متعلق ضروریات پُوری کی جا سکیں۔ اِس سے کسانوں کو ایسے وقت مجبوری میں اپنی مصنوعات بیچنے سے روکا جا سکتا ہے جب بازار میں اُس کے دام کم ہوں۔

دیہی گوداموں کا نیٹورک بنانے سے چھوٹے کسانوں کی ذخیرہ کاری صلاحیت بڑھائی جا سکتی ہے۔ اِس سے وہ اپنی پیداوار اُس وقت بیچ سکیں‌گے جب اُن کو بازار میں فائدہ مند قیمت مِل رہی ہو اَور کِسی قسم کے دباؤ میں فروخت کرنے سے اُن کو بچایا جا سکے‌گا۔ اِسی بات کو دھیان میں رکھ‌کر 2001 02 میں دیہی گوداموں کی تعمیر / مرمت کے لئے دیہی گودام اسکیم نام کا پونچی سرمایہ کاری سبسِڈی پروگرام شروع کیا گیا تھا۔

مقصد

اِس پروگرام کے خاص مقاصد میں زرعی پیداوار اَور عمل آور زرعی مصنوعات کے ذخیرہ کاری کی کسانوں کی ضروریات پُوری کرنے کے لئے دیہی علاقوں میں فریفتہ سہولتوں کے ساتھ سائنس داں ذخیرہ کاری صلاحیت کی تعمیر ؛ زرعی پیداوار کی بازاری قیمت میں اصلاح کے لئے گریڈِنگ، معیار بندی اَور کوالٹی کنٹرول کو بڑھاوا دینا ؛ وعدہ مالی انتظام اَور بازار قرض سہولت عطا کرتے ہوئے فصل کٹائی کے فوراً بعد بحران اَور دَباؤ کی وجہ سے فصل بیچنے کی کسانوں کی مجبوری ختم کرنا ؛ زرعی جنسوں کے موضوع میں قَومی گودام طریقہ عمل حصولیابی کی شروعات کرتے ہوئے ملک میں زرعی کاروبار ڈھانچہ مضبوت کرنا شامل ہے۔ اِس کے ذریعے ذاتی اَور اِشْتِراکی علاقے کو ملک میں ذخیرہ کار ڈھانچے کی تعمیر میں سرمایہ کاری کے لئے متاثر کرتے ہوئے زرعی علاقے میں لاگت کم کرنے میں مدد کی جا سکتی ہے۔

دیہاتی گودام کے تعمیر کی پرییوجنا دےشبھر میں آدمیؤں، کسانوں، کسان / پیداکار گروہوں، مقامات، غیر سرکاری تنظیمات، خود مدد گروہوں، کمپنیوں، وید، اِشْتِراکی تنظیمات، پرِسمگھوں اَور کھیتی مصنوعات کاروبار کمیٹی کے ذریعے شروع کی جا سکتی ہے۔

مقام

اِس پروگرام کے تحت کاروباری کو اِس بات کی آزادی ہے کہ وہ اپنے تجارتی فیصلے کے مُطابق کسی بھی مقام پر گودام کا تعمیر کر سکتا ہے۔ لیکِن گودام کا مقام نگر نگم علاقے کی حدود سے باہر ہونا چاہئے۔ اشیائےخوردنی عمل کاری صنعت وزرات کے ذریعے ترقی یافتہ فُوڈ پارکوں میں بنائے جانے والے دیہی گودام بھی اِس پروگرام کے تحت امداد حاصل کرنے کے اہل ہیں۔

شکل و صورت

گودام کی وُسعت کا فیصلہ کاروباری کے ذریعے کیا جائے‌گا۔ لیکِن اِس پروگرام کے تحت سبسِڈی حاصل کرنے کے لئے گودام کی وُسعت 100 ٹن سے کم اَور 30 ہزار ٹن سے زیادہ نہیں ہونی چاہئے۔ 50 ٹن قوت تک کے دیہی گودام بھی اِس پروگرام کے تحت خاص معاملے کی شکل میں سبسِڈی کے کردار ہو سکتے ہیں، جو ویہوہاریہتا تجزیے پر انحصار کریں‌گے۔ پہاڑی علاقوں میں 25 ٹن وُسعت کی شکل و صورت والے دیہی گودام بھی سبسِڈی کے حقدار ہوں‌گے۔

مقام شکل و صورت اَور وُسعت کو مختصر میں اس طرح دیا جا سکتا ہے-
لوکیشن، شکل و صورت اَور وُسعت :

  • گودام میونسِپل علاقے کی حد کے باہر ہونا چاہئے۔
  • کم از کم وُسعت : 50 میٹرک ٹن
  • زیادہ سے زیادہ وُسعت : 10،000 میٹرک ٹن
  • گودام کی اونچائی: 4-5 میٹر سے کم نہیں ہونی چاہئے
  • گودام کی وُسعت: 1 کیوبِک میٹر علاقہ 0-4 میٹرک ٹن کی حساب کا پیمانہ

سائنسی گودام کے لئے شرائط

پروگرام کے تحت تعمیر شدہ گودام انجینئرنگ توقعات کے مُطابق ساختی نظر سے مضبوت ہونے چاہئے اَور فعلی نظر سے زرعی پیداوار کی ذخیرہ کاری کے لائق ہونے چاہئے۔ کاروباری کو گودام کو چلانے کے لئے لائسنس حاصل کرنا پڑ سکتا ہے، بشرتہ ریاستی گودام قانون یا کِسی دیگر وابستہ قانون کے تحت ریاستی سرکار کے ذریعے ایسی توقع کی گئی ہو۔ 1000 ٹن وُسعت یا اُس سے زیادہ کے دیہی گودام مرکزی ذخیرہ کاری نگم (سی ڈبلیو سی)سے تسليم شدہ ہونے چاہئے۔

سائنسی گودام کے لئے اپنائی جانے والی ثابِق شرائط کو مختصر میں اس طرح دیا جا سکتا ہے :

  1. سی پی ڈبلیو ڈی / ایس پی ڈبلیو ڈی کے وِنِدےشانُسار تعمیر
  2. جراثیائم سے حفاظت (استھائی سیڑِیوں کے ساتھ اونچا  پَکّا کلیٹفارم چوہا مزاحم انتظام سَمیت)
  3. پرندوں سے حفاظت جالی والی کھِڑکِیا / روشن دان
  4. مؤثر دھونی کاری فیومیگیشن کے لئے دروازوں، کھڑکیوں کی ہوا روکنا
  5. گودام کامپلیکس میں مندرجہ ذیل سہولیات ہونی چاہئے
  6. ہموار پَکّی سڑک
  7. پَکّی اندرونی سڑ‌کیں
  8. آب نکاسی کے مناسب انتظام
  9. آتِش کش / حفاظتی انتظام
  10. سامان لادنے / اُتارنے کے معقول انتظام

قرض سے وابستہ مدد

اِس پروگرام کے تحت سبسِڈی ادارہ جاتی قرض سے وابستہ ہوتی ہے اَور صرف ایسے منصوبوں کے لئے دی جاتی ہے جو تجارتی بینکوں، علاقائی دیہی بینکوں، ریاستی مددگار بینکوں، ریاست اِشْتِراکی زرعی اَور دیہی ترقی بینکوں، زرعی ترقی مالی نگموں، شہری مددگار بینکوں وغیرہ سے مالی پروردہ کی گئی ہوں۔

پروگرام کے تحت سبسِڈی گودام کو چلانے کے لئے فعلی نظر سے اضافی سہولیات جیسے چار دِواری، بھیتری سڑک، پلیٹفارم، اندرونی آب نکاسی نظام کی تعمیر، دھرمکانٹا لگانے، گریڈِنگ، پیکیجِنگ، معیاری تصدیق کاری، ویئرہاؤسِنگ سہولیات سَمیت گودام کی تعمیر کی سرمایہ لاگت پر دی جاتی ہے۔

وعدہ قرض سہولت

اِن گوداموں میں اپنی مصنوعات رکھنے والے کسانوں کو مصنوعات گروی رکھ‌کر وعدہ قرض حاصل کرنے کا اہل سمجھا جائے‌گا۔ وعدہ قرضوں کے اصول اَور شرطوں، سود در، گروی رکھنے کی مہلت، رقم وغیرہ کا استقلال رِزَرو بینک / نابارڈ کے ذریعے جاری ہدایات اَور مالیاتی اداروں کے ذریعے اپنائی جانے والی عمومی بینکنگ طریقوں کے مُطابق کیا جائے‌گا۔

بیمہ

گودام کے بیمے کی ذمہ داری گودام کے مالک کی ہوگی۔

سبسِڈی

سبسِڈی کی در اس طرح ہوں‌گی :-

  1. نچلہ طبقہ/ قبائلی کاروباریوں اَور اِن طبقات سے وابستہ اِشْتراکی تنظیمات اَور شمال مشرقی ریاستوں، پہاڑی علاقوں میں واقع منصوبوں کے معاملے میں منصوبہ بندی کی سرمایہ لاگت کا ایک تہائی (33.33 فیصدی)سبسِڈی کے طور پر دیا جائے‌گا، جِس کی زیادہ سے زیادہ حد 3 کروڑ روپیے ہوگی۔
  2. کسانوں کے تمام زمروں، زرعی گریجویٹ اَور اِشْتِراکی تنظیمات سے وابستہ منصوبہ بندی کی سرمایہ لاگت کا 25 فیصدی سبسِڈی دی جائے‌گی جِس کی زیادہ سے زیادہ حد 2.25 کروڑ روپیے ہوگی۔
  3. دیگر تمام زمروں کے آدمیؤں، کمپنیوں اَور نگموں وغیرہ کو منصوبہ بندی کی سرمایہ لاگت کا 15 فیصدی سبسِڈی دی جائے‌گی جِس کی زیادہ سے زیادہ حد 1۔35 کروڑ روپیے ہوگی۔
  4. این سی ڈی سی کی مدد سے کئے جا رہے اِشْتِراکی تنظیمات کے گوداموں کی مرمت کی منصوبہ بندی لاگت کی 25 فیصدی سبسِڈی دی جائے‌گی۔
  5. پروگرام کے تحت سبسِڈی کے مقصد کے لئے منصوبہ بندی کی سرمایہ لاگت کا حساب درج ذیل مطابق کیا جائے‌گا :-
  1. 1000 ٹن وُسعت تک کے گوداموں کے لئے مال فراہم کنندہ بینک کے ذریعے پیمائش شدہ منصوبہ بندی لاگت یا حقیقی لاگت یا روپیے 3500 فی ٹن ذخیرہ کاری وُسعت کی در سے آنے والی لاگت، اِن میں جو بھی کم ہو ؛
  2. 1000 ٹن سے زیادہ وُسعت والے گوداموں کے لئے :- بینک کے ذریعے پیمائش شدہ منصوبہ بند لاگت یا حقیقی لاگت یا روپیے 1500 فی ٹن کی در سے آنے والی لاگت، اِن میں جو بھی کم ہو۔

تجارتی/ اِشْتِراکی بینکوں اَور علاقائی دیہی بینکوں کے ذریعے مالی پروردہ منصوبوں کے معاملے میں سبسِڈی نابارڈ کے ذریعے جاری کی جائے‌گی۔ یہ رقم مال فراہم کنندہ بینک کے سبسِڈی رِزَرو فنڈ کھاتے میں رکھی جائے‌گی اَور محصولات سے آزاد ہوگی۔

ماخذ : ایم وی ایس پرساد (جوائنٹ ڈائریکٹر، پريس اطلاعات دفتر، چینّئی) کے ذریعے تحریرشدہ، پريس اطلاعات دفتر (پسوکا پریس انفارمیشن بیورو)

1.85714285714
اپنی تجاویز ارسال کریں (اگر مذکورہ بالا مواد پر آپ کو کوئی تبصرہ/تجویز دینی ہو تو براہ کرم یہاں درج کریں))
Enter the word
Related Languages
Back to top